Discovery of Metteyya the Awakened One with Awareness Universe(FOAINDMAOAU)
From Analytic Insight Net - FREE Online Tipiṭaka Law Research & Practice University in
 116 CLASSICAL LANGUAGES in BUDDHA'S own Words through http://sarvajan.ambedkar.orgat 668, 5A main Road, 8th Cross, HAL 3rd Stage, Punya Bhumi Bengaluru- Magadhi Karnataka State -PRABUDDHA BHARAT
Categories:

Archives:
Meta:
March 2014
M T W T F S S
« Feb   Apr »
 12
3456789
10111213141516
17181920212223
24252627282930
31  
03/27/14
1160 LESSON 28314 FRIDAYFREE ONLINE E-Nālanda Research and Practice UNIVERSITY Email me at awakenmedia.prabandhak@gmail.com chandrasekhara.tipitka@gmail.com BSP BANGALORE CENTRAL LOK SABHA CONSTITUENCY For SARVAJAN HITAYA SARVAJAN SUKHAYA -WELFARE AND HAPPINESS OF ALL SOCIETIES-Mighty PRABUDDHA BHARATH A Proved administrator through best governance who earned affection from all sections of the society BEHEN KUM. MAYAWATI JI Make her Maha Mayawati the next Prime Minister of Prabuddha Bharath Mohan Raj Candidate Bengaluru Central A DIRECT FIGHT BETWEEN SARVAJAN HITAYA SARVAJAN SUKHAYA- A TRUE SECULAR MOVEMENT AND STEALTH COMMUNAL CULT Mayawati said, “I am a stubborn person – whether I am in power or not, I will continue to fight for Sarvasamaj.”- A statement of Compassion and Loving Kindness of the Awakened One with Awareness. Blaming the economic policies of both Congress led UPA government and previous BJP (Bahuth Jiyadha Paapi) led NDA regime at the Centre, she said “while a huge amount of black money is stashed in foreign banks, neither Congress nor BJP had made any effort to bring it back.”-”If the black money is brought back, most of the problems faced by the poor, Scheduled Castes and tribals would be over for all time to come. But, those in power don’t take such step,” she said. after 67 years The Supreme Court endorsed this view on 26th March 2014.Only after Ms Mayawati becomes the Prime Minister will bring back the black money.
Filed under: General
Posted by: site admin @ 9:01 pm






india flag



1160 LESSON 28314 FRIDAYFREE ONLINE E-Nālanda Research and Practice UNIVERSITY


Email me at

awakenmedia.prabandhak@gmail.com
chandrasekhara.tipitka@gmail.com

To

The White House via service.govdelivery.com

The White House info@messages.whitehouse.gov

Important mainly because of the people in the conversation.

Along with Government Insurance scheme millions of people may also practice the following:

1) Get up at 3:30 in the morning.
2) Take a bath
3) move all parts of the body.
4) Go for a walk or swim for an hour
5) Break fast with
 t
tomato 1 carrot, small piece of cabbage, 4 beans, 4 peas, 1 knol kol, 2
small cauliflower pieces, little moong dal, mustard, mint leaves all
dry heated with 1tbl spoon of cooking oil. boil 2 table spoons of boiled
brown rice, 2 tbl spoons of Tur Dal and add them together with little
pepper and salt and a bowl of this Awakened One with Awareness (AOA) delight .
6) Lunch
One more bowl of (AOA) delight could be eaten.
All
day long keep your mind calm, quiet, alert, attentive, with an
equanimity mind with a clear understanding that every thing is changing
as Dukkha (misery and suffering exist and also Dukkha Nirodha (End of
misery and suffering) also exists.

Please visit:
http://sarvajan.ambedkar.org
for more and more happiness.


“I understand that people from BJP and RSS visit remote areas of Odisha
and persuade adivasis and Scheduled Castes to go for reconversion in order to
change their living standards. I am telling you not to change religion,
but governments both in the State and the Centre,” Mayawati told a
public meeting here.

Stating that about 50 per cent of Odisha’s population comprised tribals
and Scheduled Castes, Mayawati said there had been no development of poor people
even 65 years after Independence. She also highlighted the plights of
poor people among the upper caste communities.


Holding poverty and unemployment responsible for the growth of left wing
extremism, Mayawati said the Maoist menace would certainly come down if
the government took steps to uplift the poor members of the society.


She said Odisha and other states ruled by Congress and BJP remained poor and backward for ages due to faulty
policies of successive governments in the state and the Centre. “We will
fulfil Odisha’s demand of a special category State status if voted to
power in Centre,” Mayawati said.


“We have reduced poverty in Uttar Pradesh and distributed un-utilised
government land to landless people. Same can be done in Odisha and
elsewhere,” she said.

Appealing to people to vote for BSP candidates in the ensuing twin
polls, Mayawati said “we do not have alliance with anyone in the state.
BSP has put candidates in all the 21 Lok Sabha and 147 assembly segments
of Odisha.”


Lucknow: BSP supremo Mayawati hinted that she will go it
alone in upcoming Lok Sabha elections.She was addressing a ‘Savdhan
Vishal Maha Rally’   in Lucknow on the occasion of her 58th birthday.


 

14anim.gif

Mayawati said
she was happy that poor people attended the BSP rally. “We do not bring
people by bus or train to show fake strength. I am happy that so many
people attended the meeting despite scorching heat,” she said.

Mayawati
said that the Congress, BJP and Samajwadi Party (SP) were all
working in cahoots to prevent her, a Scheduled Caste woman, from rising
in
politics for the benefit of Sarvasamaj. They do that because she is on
the right path. No sooner they see, hear or even think of an untouchable
they get upset and enraged of hatred, anger, jealousy which are all
nothing mental disease suffered by them from time immemorial  because of
defile of the mind. The solution is to treat them in Mental Asylum to
make them become normal.

She
exhorted party workers and supporters to fan out into every nook and
cranny in the country to inform people of the inclusive policies of the
BSP.

She asked them to ensure that the “vote transfer” strategy of political rivals against the Bahujan Samaj Party is countered.

“We
cannot just keep complaining about the others, we must also devise
strategies to defeat this nefarious design of our opponents,” she told
the crowd, which roared in approval.

Mayawati
asked her supporters to ensure that people of all sections, “sarva
samaj” (all of society), are brought under the BSP’s umbrella, which
will unite people from all classes and castes, including the Scheduled
Castes, the Scheduled Tribes and the other backward classes.

THE
ONLY NATIONAL LEADER WHO IS AWAKENED WITH AWARENESS TO MAKE THIS
STATEMENT ELEVATES HER FROM BEHEN MAYAWATIJI TO MAHA MAYAWATJI, THE NEXT
PRIME MINISTER OF PRABUDDHA BHARATH.


Pointing
out that while her party only won 20 Lok Sabha seats in 2009, its
candidates stood second in 47 seats, the Sarvasamaj leader said the time has
come to focus on these seats also, so that the party bags the maximum
number of seats in the state.


Alleging
that the central parties have unleashed the Central Bureau of
Investigation (CBI) against her, Mayawati said she was a victim of a
political witch hunt that cornered her between 2003-2006.


“I
was pushed into trouble between those years, but I never lost hope and
am thankful to all those who stood by me then,” she said, while trying
to strike an emotional chord with the people who braved intense cold to
attend the rally.

THIS AGAIN PROVES
THE MADNESS OF INTOLERANCE.THEY DO THIS BECAUSE THE UNTOUCHABLES ARE
ALWAYS ON THE RIGHT PATH.WHENEVER THEY BECOME ELIGIBLE FOR THEIR HIGHER
ELEVATION OR PROMOTION THEY UNLEASH SUCH TERROR. NOW AS MS MAYAWATJI HAS
BECOME ELIGIBLE FOR PRIME MINISTER THEY ARE UPSET AND BECOME ANGRY
BECAUSE OF THEIR TRADITIONAL  HATRED AND JEALOUSY THAT ARE NOTHING BUT
DEFILEMENT OF THE MIND WHICH IS MENTAL DISORDER AND DISEASE WHEN THEY
SEE, HEAR OR EVEN THINK OF AN UNTOUCHABLE SCHEDULED CASTE OR TRIBE. THE
ONLY SOLUTION IS TO PUT THEM IN MENTAL ASYLUM AFTER DEFEATING THEM IN
ALL THE STATE AND CENTRAL ELECTIONS. THIS WILL HAPPEN.

EVERYONE
IN THIS COUNTRY BELONG TO THE SAME RACE THOUGH THEIR ARTIFICIALLY
CREATED CASTES RELIGIONS. HINDUTVA IS A CULT MANUFACTURED BY RSS’s
BAHUTH JIYADHA PAAPIS (BJP) SUPPORTED THEIR CREATION AMBANI ADANI PAAPIS
(AAP) TO CONFUSE THE MINDS DIRECTLY THE MUSLIMS, CHRISTIANS AND
INDIRECTLY SCST/OBC/MINORITIES/POOR BRAHMINS, BANIYAS AND KSHATRIAS
BECAUSE OF THEIR GREED FOR POWER TO LOOT THE ENTIRE WEALTH OF THIS
COUNTRY WITH OUT REALISING THE FEARLESSNESS OF THESE COURAGEOUS AND BOLD
PEOPLE.

IN THIS
WORLD OF GODS AND MEN, TOGETHER WITH MAARAS, BRAHMAS AND THE COMMUNITY
OF RECLUSES AND BRAHMINS I DO NOT SEE ANYONE COULD CONFUSE THEIR MIND,
OR SPLIT THEIR HEART, OR TAKEN BY THEIR FEET COULD THROW THEM TO THE
OTHER BANK OF THE RIVER.

“Faith,
is the foremost wealth to man, the Teaching well practiced brings
pleasantness. Of tastes truth is the foremost The livelihood of one
living wisely is said to be the foremost. “

With
faith, the flood is crossed, with diligence the ocean, With effort
unpleasantness gets exhausted, and with wisdom purity comes about”

Placing
faith in the perfect state and the Teaching to attain extinction, Those
that listen to it diligently and discriminateingly gain wisdom. 

 Those
suitably yoked with aroused effort experience the Teaching. Through
truthfulness Ms MAYAWTI JI  became famous and by giving VOTERS are bound.

To
a householder with faith, if there be truthfulness, training, Right
view and generosity, he or she would not grieve afterwards.

Now
come on, question other recluses and brahmins, to know, Whether there
is much truthfulness, training, generosity and forbearance evident here.

What is there to question now, from recluses and brahmins. Today I know what is essential for the next government.

It is for our good that the Awakened One came to this world, Now we know that, VOTE given to whom is of much fruit.

“Now
WE will go from village to village and from town to town, ASKING FOR
VOTES TO ACQUIRE THE MASTER KEY FOR BSP ELEPHANT TO ENTHRONE THE ALL
AWAKEN ONE WITH AWARENESS MAHA MAYAWATIJI AS THE NEXT PRIME MINISTER OF
PRABUDDHA BHARATH.

Urging
party workers and supporters to ensure that the BSP returns to power
with absolute majority in Uttar Pradesh in the state assembly polls of
2017, Mayawati asked them to ensure that the state sends the maximum
number of BSP members to the Lok Sabha.


FOR YOUR WISE DECISION
TO

 

14anim.gif

AND
 TO HAND OVER THE MASTER KEY TO  BAHEN MAYAWATI JI AS NEXT PRIME MINISTER MAHA MAYAWATI JI
OF
PRABUDDHA BHARATH

When walking, standing, sitting or even lying, it is bending and stretching, These are the movements of the body.

Bones
and veins bound together are covered up with flesh and skin, The body
is covered up with the skin, and the true state is not seen.

The inside is full, the stomach is full with the liver and sexual organs, So also with the heart, lungs, kidneys and the spleen.

It is also full of snot, saliva, sweat and oil of the body, With blood, oil of the joints, bile and the hardened oil.

Then from the nine external doors secrete filth all the time. Through the eyes and ears there are secretions.

There
is snot coming from the nose and through the mouth vomit, So also bile
or phlegm is vomited, from all over the body sweat trickles.

His perforated scull is filled with marrow, The fool deluded thinks it is something agreeable.

When he lies on his back dead, bloated and turned blue, And thrown into the charnel ground, he is not owned by his relatives.

It is eaten by dogs, jackals, wolves and worms, Crows and hawks too eat it, and whatever other creatures there be.

The bhikkhu hearing the words of the Awakened One, becomes wise, Looks at the body as it really is, and learns it thoroughly.

As I am now, this body also was: as this body is, so I will be, Thus he dispels interest for the body internally and externally.

The bhikkhu dispelling interest and greed for the body becomes wise. Realises deathless appeasement and experiences extinction

This two footed thing is filth giving out a bad smell. It is full of various kinds of filth and strews them here and there.

With such a body, if one thinks conceitedly, Or if he talks low of others, -what is it other than lacking in wisdom.

Why this Jathiveri! Madhveri! koalveri! Kolaveri ! of CONGRESS, BAHUTH JIYADHA PAAPIS (BJP) & AMBANI ADANI PAAPI (AAP) di! da!


http://www.indiatvnews.com/politics/national/in-pics-mayawati-s-savdhan-vishal-maha-rally-in-lucknow-14406.html?page=1

She
took a dig at other parties, saying that her rally was not of people
“sitting on chairs, but of people who sit on durries (mats)”.

She targetted arch rival Samajwadi Party and accused it of running a mafia government in Uttar Pradesh.

The state has turned into a “crime pradesh”, she said, demanding the imposition of president’s rule.

Despite
extending support to the United Progressive Alliance government at the
centre during its second term in office, Mayawati lashed out at the
Congress-led government, and blamed it for inflation, economic slowdown,
price rise, rising unemployment, growing disparity in society, policy
paralysis, threat to internal security and a weak foreign policy.

Mayawati had decided not to celebrate her birthday like previous years because of Muzaffarpur riots.

Instead she has decided to address the ‘Savdhan Vishal Maha Rally’ at the Ramabai Ambedkar maidan in Lucknow.

Six
elephant statues were erected right in front of the stage. For making
these statues , sculptors were especially called from Kolkata.

Out
of these six elephants, four elephants have their trunk lying towards
the ground (BSP election symbol) and the rest two elephants have their
trunks facing the sky, a symbol of victory.Mayawati also released the
ninth volume of her autobiography “Bhajun movement- mere sangharsh ki
atmakatha” in this rally.


Democracy Friendly Media in
21) Classical English

http://www.indianist.com/india-general-election-lok-sabha-election-2014-results/#comment-21294


http://ijnet.org/blog/how-transmedia-reporting-could-make-journalism-investigations-more-transparent#comment-34649
IJNet -

IJNet - http://www.ndtv.com/elections/article/election-news/op-ed-jaswant-singh-bjp-s-odd-one-out-499005?pfrom=home-elecdec13_allnews
Lok Sabha Elections 2014

Lok Sabha Elections 2014http://www.tehelka.com/beware-the-class-conflict/
Tehelka.comTehelka.com
https://plus.google.com/+foxsearchlight/posts

Fox Searchlight

http://japanfocus.org/-Jon-Mitchell/4097
http://www.hindustantimes.com/comment/rajdeepsardesai/time-for-media-to-turn-the-gaze-inwards/article1-1199548.aspx





http://www.indiatvnews.com/politics/national/in-pics-mayawati-s-savdhan-vishal-maha-rally-in-lucknow-14406.html?page=1

Uttar Pradesh




BSP out 80 Candidates name for Loksabha Election 2014 | Bahujan Samaj Party will contest 80 seats in UP

BSP out 80 Candidates name for Loksabha Election 2014 |
Bahujan Samaj Party will contest 80 seats in UP. Mayawati show social
engineering in its first list.


BSP have given 21 to Brahmins,15 tickets to people from backward classes, 19 to Muslims,  8 to Kshatriyas


Satish Chandra Mishra General Secretary of BSP party’s  to take on
BJP’s prime ministerial candidate Naredra Modi in Varanasi Loksabha
seats


Aonl Loksabha Seat BSP candidate name Ms Sunita Shakya
Azamgar Loksabha Seat BSP candidate name Shah Alam alias Guddu Jamali
Badayu Loksabha Seat BSP candidate name Akmal Khan alias Chaman
Baghpa Loksabha Seat BSP candidate name Prashant Chaudhary
Bahraic S Loksabha Seat BSP candidate name Dr Vijay Kumar
Balli Loksabha Seat BSP candidate name Virendra Kumar Pathak
Balrampu Loksabha Seat BSP candidate name Lalji Verma
Band Loksabha Seat BSP candidate name R K Singh Patel
Bansgao S Loksabha Seat BSP candidate name Sadal Prasad
Barabank S Loksabha Seat BSP candidate name Kamla Prasad Rawat
Bareill Loksabha Seat BSP candidate name Umesh Gautam
Bast Loksabha Seat BSP candidate name Ram Prasad Chaudhary
Bhadoh Loksabha Seat BSP candidate name Rakeshdhar Tripathi
Bijnor Loksabha Seat BSP candidate name Maluk Nagar
Bulandshaha S Loksabha Seat BSP candidate name Pradip Jatav
Chandaul Loksabha Seat BSP candidate name Anil Kumar Maurya
Deori Loksabha Seat BSP candidate name Niyaz Khan
Dhaurhar Loksabha Seat BSP candidate name Daud Ahmed
Dumariyagan Loksabha Seat BSP candidate name Mohammed Muqeem
Eta Loksabha Seat BSP candidate name Engineer Noor Mohammed
Etawa S Loksabha Seat BSP candidate name Ajaypal Singh Jatav
Faizaba Loksabha Seat BSP candidate name Jitendra Singh alias bablu
Farrukhaba Loksabha Seat BSP candidate name Jaiveer Singh
Fatehpu Loksabha Seat BSP candidate name Afzal Siddiqui
Fatehpu Sikr Loksabha Seat BSP candidate name Ms Seema Upadhyay
Firozaba Loksabha Seat BSP candidate name Thakur Vishwadeep Singh
Gauta Budd Naga Loksabha Seat BSP candidate name Satish Awana
Ghaziaba Loksabha Seat BSP candidate name Mukul Upadhyay
Ghazipu Loksabha Seat BSP candidate name Kailashnath Singh Yadav
Ghos Loksabha Seat BSP candidate name Dara Singh Chauhan
Gond Loksabha Seat BSP candidate name Akbar Ahmed Dumpy
Gorakhpu Loksabha Seat BSP candidate name Rambhual Nishad
Hamirpu Loksabha Seat BSP candidate name Rakesh Goswami
Hardo S Loksabha Seat BSP candidate name Shiv Prasad Verma
Hathra S Loksabha Seat BSP candidate name Manoj Kumar Soni
Jalau S Loksabha Seat BSP candidate name Brijlal Khabri
Jaunpu Loksabha Seat BSP candidate name Subhash Pandey
Jhans Loksabha Seat BSP candidate name Ms Anuradha Sharma
Kairan Loksabha Seat BSP candidate name Kanwar Hassan
Kaisergan Loksabha Seat BSP candidate name Krishna Kumar Ojha
Kannau Loksabha Seat BSP candidate name Nirmal Tiwari
Kanpu Loksabha Seat BSP candidate name Salim Ahmed
Khir Loksabha Seat BSP candidate name Arvind Giri
Koshamb S Loksabha Seat BSP candidate name Suresh Passi
Kushinaga Loksabha Seat BSP candidate name Sangam Mishra
Lalgan S Loksabha Seat BSP candidate name Dr Baliram
Luckno Loksabha Seat BSP candidate name Nakul Dubey
Machhlishah S Loksabha Seat BSP candidate name V P Saroj
Maharajgan Loksabha Seat BSP candidate name Kashinath Shukla
Mainpur Loksabha Seat BSP candidate name Dr Sanghamitra Maurya
Mathur Loksabha Seat BSP candidate name Pandit Yogesh Kumar Dwivedi
Meeru Loksabha Seat BSP candidate name Haji Shahid Ikhlaq
Mirzapu Loksabha Seat BSP candidate name Smt Samudra Bind
Misrik S Loksabha Seat BSP candidate name Ashok Rawat
Mohanlalgan S Loksabha Seat BSP candidate name R K Chaudhary
Moradaba Loksabha Seat BSP candidate name Haji Yaqub Qureshi
Muzaffarnaga Loksabha Seat BSP candidate name Qadir Rana
Nagin S Loksabha Seat BSP candidate name Girish Chandra Jatav
Phulpu Loksabha Seat BSP candidate name Kapilmuni Karwaria
Pilibhi Loksabha Seat BSP candidate name Anees Ahmed alias Phool Babu
Pratapgar Loksabha Seat BSP candidate name Asif Nizamuddin Siddiqui
Ra Bareli Loksabha Seat BSP candidate name Pravesh Singh
Rampu Loksabha Seat BSP candidate name Haji Akbar Hussain
Robertsgan S Loksabha Seat BSP candidate name Sharda Prasad
Saharanpur Loksabha Seat BSP candidate name Jagdish rana
Salempu Loksabha Seat BSP candidate name Ravi Shankar Singh alias Pappu
Sambha Loksabha Seat BSP candidate name Aqilurehman Khan
San Kabi Naga Loksabha Seat BSP candidate name Bhishma Shankar Tiwari alias Kushal Tiwari
Shahjahanpu S Loksabha Seat BSP candidate name Umed Singh Kashyap
Sitapu Loksabha Seat BSP candidate name Smt  Qaiser Jahan
Sultanpu Loksabha Seat BSP candidate name Pawan Pandey
Unna Loksabha Seat BSP candidate name Brajesh Pathak
Varanasi Loksabha Seat BSP candidate name Vijay Prakash Jaiswal

BSP to Go It Alone in State, Releases List of 21 Candidates

The Bahujan Samaj Party (BSP), which has decided to field its
candidates in all the 28 Lok Sabha seats in the state, has released its
first list of 21 candidates here on Friday.

Releasing the party
candidates list, party in-charge for Karnataka Ashok Sidharth said the
BSP will not have any electoral pact with other parties and would fight
the elections on its own.

Stating that the Bahujan Samaj Party  has decided to field three women.

All the Lok Sabha 2014  Candidates of BAHUJAN SAMAJ PARTY have taken oath that  Number
One Largest Fearless, without any alliance, Sarva Samaj Hitaya Sarva Samaj Sukhaya Movement i.e., All
Societies including SC/ST/OBC/Minorities/poor brahmins, baniyas,
kshatriyas’ welfare, happiness, peace as enshrined in the Constitution Movement 
is Ms Maha Mayawati, the Future Prime Minister of PRABUDDHA BHARATH’s
Democracy Friendly Bahujan Samaj Party (BSP) - Akin to Nelson Mandela’s Movement.

All Candidates are working with Nation’s
citizen to transform Sarva Samaj i., All Societies economically as
enshrined in the Constitution.

With a clean image, they are  known
for their hard work for relieving the Dukkha i.e., Misery and Sufferings
of SC/ST/OBC/Minorities and poor brahmins, baniyas and kshatrias and for
their proportional representation in all government, PSU, Private
sector, agriculture, trade, business through honest and sincere
governance as a public servants.

They have  proved and provided
active inputs to civic authorities of the Country to improve the living
conditions of all sections of the City.

They are guiding young
entrepreneurs belonging to all sections of the society  in creating a
global product company  as done in Uttar Pradesh by Ms Mayawati.

They work  for Dukkha Nirodha i.e., End of Misery & Suffering of All
Societies with the help of the Constitution and ultimately for them to
attain Eternal Bliss as their Final Goal.

STAR CAMPAIGNERS OF BAHUJAN SAMAJ PARTY

01 BSP National President - Behan Kum. Mayawatiji

02 BSP National Gen. Secretary - Satish Chandra Mishra

03 Karnataka Co-ordinator - Dr. Ashok Siddharthji MLC (UP) 9741155132

04 State President - Marasandra Muniappa 9845328365

05 State Convenor - Dr.C.S. Dwaraknath 9845459108

06 State Convenor - N.Mahesh 9448468972

07 State Treasurer - Koramangala Muniappa 9741416045

08 State Gen, Secretary - B.Kamalanabhan 9844019273

09 State Gen. Sec. - R.Muniappa 9980606657

10 State Gen.Sec. - Dr.Jayprakash 9845244873

11 State Exc.Com. member- Vyjanath Suriyavamshi 9448445060

12 State Exc.Com.Mem - Nagesh Kiwad 9448211071

13 State Exc.Com Mem - sheik Bahadur 9448622531

14 Gen.sec. - Dr.Rajiv Kamble 9945714523

15 Gen Sec - R. Chengappa 9663999277

16 Gen Sec - Hennur Lakxminarayan 9343759849

17 Zonal Incharge - Dr. Dastagir Mulla Mukandar 8971502666

18  Zonal Incharge   - Y.Narasappa 9035063387

19  Zonal Incharge -  Velaudhan 9448355221

20 Zonal Incharge - Smt. Nahida Salma 9880438471

21 Zonal Incharge - GR Panduranga 7026268288

22 Zonal Incharge - Capt.Somshekar 9448175381

23 Zonal Incharge - Siddhiah 9900117125

24 Zonal Incharge - B.Vittal Nayak Dakulagi 7795202668

24 Zonal Incharge- KB Vasu 9740722317

25 Zonal Incharge- Ravikanth 9945331267

26 Zonal Incharge - Arkalavadi Nagendra 9986865675

27 Zonal Incharge - Eranna Mauri 9844294303

28 Zonal Incharge - Narasappa 9035063387

29 Zonal Incharge - L Ramesh Katriguppe 9980187086

30 Bangalore Youth President M.Sandeep 9980400454

31 Zonal Incharge - Annadanappa 9663604727

32 Zonal Incharge-Gurumurthy 9741349261

33 Zonal Incharge C.Lokesh 9739360973

34 Zonal Incharge -Dharmanna Totapur 8951646504

35 Zonal Incharge - Prakash Babu 7026677965

https://www.youtube.com/watch?v=QPJP0k1fspw


mayawati chief minister of uttar pradesh iron lady. 42:32 Mins

Please watch :

https://www.youtube.com/watch?v=SSuFZ89nklA

Walk The Talk - Interview with Behan Mayawati Ji 22.20 mins

https://www.youtube.com/watch?v=xYDxdnSwfao

Important speech of Saheb Kanshi Ram Ji - Part 1 42.13 mins

https://www.youtube.com/watch?v=AWV2phRShI8

Important Speech of Saheb Kanshi Ram Ji - Part 2 40.46 mins

https://www.youtube.com/watch?v=kw8Uk_ac5Tw

Important Speech of Saheb Kanshi Ram Ji — Part 3 42.40 mins

https://www.youtube.com/watch?v=URAjyffdV0Y

Important Speech of Saheb Kanshi Ram Ji Part 4 Final Part42.26 mins

https://www.youtube.com/watch?v=s9wg_d-2PVA

Sahab Kanshiram’s speech on PAY BACK TO SOCIETY 1:39:09 Hr

https://www.youtube.com/watch?v=RcLVO_n5Exg

Documentary on Kanshiram Ji 31:53 mins

https://www.youtube.com/watch?v=EkdmPMiXjsQ

Dalit Queen Kumari Mayawati 18:43 mins

https://www.youtube.com/watch?v=b2V42LJy6nM

History of Mayawati10:26 mins

https://www.youtube.com/watch?v=mJNeWXeIrsk

Mayawati Murder Plan Exposed 28:24 mins

https://www.youtube.com/watch?v=4h75P13a5HI

Mayawati’s Rajyasabha speech on SC/ST promotions - 30.04.2  …..32:24 mins

Published on May 5, 2012


AMBETH RAJAN
National Treasurer
Bahujan Samaj Party
Member of Parliament (RS)
Mobile: +91 98 68 222 333

https://www.youtube.com/watch?v=YFGsWegRHsA


Zero Hour: Mayawati’s bouncer on Rahul, Modi - Part 1..11:26 mins.

https://www.youtube.com/watch?v=FKylZJoyJcs

Zero Hour: Mayawati’s bouncer on Rahul, Modi - Part 2 14:49 mins.

Kicking off her party’s election campaign at a mega rally here, Mayawati
on Wednesday said BSP would not forge an alliance with Congress, BJP or
any other party and would go it alone in the Lok Sabha polls.

https://www.youtube.com/watch?v=MAdNeksJ1ys

MAYAWATI’S SPEECH bsp28:27 mins

Published on Jun 13, 2013

MAYAWATI’S SPEECH bsp

https://www.youtube.com/watch?v=95QmGKltODc

Mayawati press conference at Lucknow (18/04/2013)26:36 mins

Published on Apr 18, 2013

Mayawati press conference at Lucknow (18/04/2013)

https://www.youtube.com/watch?v=xVQOzPr2iBc

Mayawati - Anatomy of a Rally21:50 mins




Bahujan Samaj Party (BSP) chief Mayawati laid
bare her most earnest prime ministerial ambitions at a press conference
in Lucknow on Thursday. Though she said that talk of alliances and
alignment with like-minded secular parties would be done after election
results are announced, she did assert that she would want to form at
government at the Centre “on the UP formula”. However, she left the
journalists high and dry about what she meant by that formula.

“Our target in this Lok Sabha election is to become the balance of
power at the Centre,” she said at the rather over-crowded press meet.
“If we do achieve that, we would want to form our own government with
the help of like-minded and secular allies,” she added.

If the party’s candidates’ list is any indication, Mayawati seems to
be going ahead with her SC/ST-Brahmin-Muslim social engineering
experiment once again. It was this combination which got her a
comfortable majority in the 2007 UP Assembly election.

The party has given the maximum number of tickets in UP to Brahmins
(21) followd by Muslims (19) and SC/STs (17). Mayawati said the ticket
distribution was in proportion to the contribution made by the
particular caste or community to the party’s growth.

As different from other parties, Mayawati released the entire list of
BSP candidates for the 80 Lok Sabha seats in UP at one go. “I do not
declare candidates in instalments,” she said, taking a dig at other
parties which have been releasing piecemeal lists of nominees. Though
the list has been officially declared now, the fact is that the BSP was
the frontrunner in finalizing almost all its candidates about three
months ago.

The Sarvajan Samaj  icon said the BSP was committed to stop “the communal
forces led by the BJP” and the “non-performer and corrupt” UPA regime
from returning to power “with all our might”. Significantly, she made no
mention of the Third Front which includes her bête noire’s Samajwadi Party (SP).

In fact, she said, Mulayam and Modi were both contesting from seats
in eastern UP as part of a secret understanding. “This is a conspiracy
to turn this election into a Hindu versus Muslim contest. They are
playing a dangerous communal game for their vested interests,” she
alleged. She also did not spare the Akhilesh Yadav regime, saying that
it had been a poor performer in the fields of development, and law and
order.

Interestingly, the BSP never issues a manifesto, though as before
every election, Mayawati released an appeal to the people to vote for
“Sarvajan hitaaye, sarvajan sukhaaye” (progress and prosperity for all),
the BSP’s motto.

As a sting in the tail, she warned the media against putting out
stories twisted out of context against the BSP. “I have been seeing that
the media never shows positive news about our party but always carries
misleading stories about us,” she complained.

Maya’s changing calculus (candidates’ caste break-up)

                 2004         2009        2014

Brahmins   07           20            21

OBCs         27            17            15

Muslims    20            14            19

Thakurs    06            06            08

SCs          17            17             17

NB: 17 seats are reserved for SC/ST in UP.

BSP to go alone in Lok Sabha polls: Mayawati



Mayawati said that she has already
gone with the saffron party in the state and would not do it again as
there had been no change in its ideology. Tweet This





 
Mayawati said that she has already gone with the saffron party in the
state and would not do it again as there had been no change in its
ideology.

Bahujan Samaj Party will field candidates in all 80 Lok Sabha
seats in Uttar Pradesh and will not go with “communal” BJP and its
allies for government formation, its supremo Mayawati said on .


Releasing BSP’s list of all candidates in the state in one instalment
“unlike political opponents”, she said her party is contesting the
elections with full preparation to “emerge as the balance of power at
the Centre”. “Once we emerge as balance of power, we will take the help
of only secular parties for forming the government,” the BSP supremo
said.


On BJP with whose support she had formed the government in UP thrice,
Mayawati said that she has already gone with the saffron party in the
state and would not do it again as there had been no change in its
ideology.


“We have tried BJP thrice in UP and there has not been any change in
their thinking and ideology. When we were in a coalition we ran the
government as per our ideology and once they tried to interfere in it we
opted out,” she said. “Instead of issues like unemployment, corruption
and poverty, the coming elections appear to be a contest between two
ideologies of communalism and secularism,” she said, adding that most
parties have fielded their candidates keeping this fact in mind.


The former chief minister asserted that her party would fight the
coming polls with all its strength to check communal parties from coming
to power and, at the same time, said that Congress-led UPA which has
“failed on all fronts” should not be allowed to return. Asked whether
she would take the help of Samajwadi Party for government formation, she
said that BSP does not consider it as a secular party.


“SP government’s tenure in Uttar Pradesh so far has been really bad
specially on the law and order and development front… so there would be
every effort to ensure that this time the right party leads the
government at the Centre on the policy of ‘Sarvjan Hitai Sarvjan Sukhai
(for the benefit and happiness of all),” she said.


On the candidature of BJP’s prime ministerial candidate Narendra Modi
and SP chief Mulayam Singh Yadav from Varanasi and Azamgarh
respectively, she said, “her party believes that the decision of both
contesting from Purvanchal is the result of a well planned internal
understanding.


She alleged that such a “conspiracy” was to give the contest a
communal colour, and appealed to people to ensure that the communal
forces are not be allowed to win.


Through media, she also requested the Chief Election Commissioner to
keep a close watch on the campaigning of the two as “they could spoil
the atmosphere of the country”.


Replying to a question, Mayawati ruled out having any talks with
Trinamool Congress’ Mamata Banerjee or AIADMK’s Jayalalithaa saying that
since her party is contesting on its own there was no question of any
discussion.


Advising her cadres to desist from “Manuvadi” media campaign, she
took strong exception to reports in a section that she would be entering
into the contest from Lalganj (reserved) seat adjacent to Azamgarh from
where Mulayam Singh is in the fray.


“I am not aware that I am going to contest from Lalganjseat (in
Azamgarh) and party leaders Satish Chandra Mishra or Naseemuddin
Siddiqui from Varansi and Azamgarh seats respectively, I contradict such
news items published in a section of media”, she said.


On the occasion, she released the list of names of candidates for all
80 seats in UP which she said have been decided keeping in mind the
representation of all sections of society and their support to the
party.


“On 17 reserved seats, different castes of SCs have been fielded, 15
backwards, 19 Muslims while 29 upper castes including 21 Brahmins and
eight Kshatriya have been given tickets,” Mayawati said, adding that
seven women have also been fielded.


She said her party would also field candidates in other states where
the movement and the organisation has come into being and their lists
would be announced soon.


Mayawati would begin her campaign all over the country from March 22
and devote 90 per cent of her time in UP where she would address the
first meeting in Bijnore on April 3. The BSP, which does not issue poll
manifestos like other parties, instead issued 24 page booklet in the
form of Mayawati’s appeal.

Prominent names in the fray are: Vijay Pratap Jaiswal (Varanasi),
Akbar Hussain (Rampur), Shah Alam (Azamgarh), Qadir Rana
(Muzaffarnagar), Mukul Upadhyaya (Ghaziabad), Satish Awana (Noida),
Seema Upadhyaya (Fatehpur Sikri), and Narayan Singh (Agra).


Anees Ahmad is the party candidate from Pilibhit and would contest
against BJP’s Maneka Gandhi; Parvesh Singh from Rae Bareli has been
pitted against Congress president Sonia Gandhi; Dharmendra Pratap Singh
against Rahul Gandhi in Amethi and Nakul Dubey against BJP national
president Rajnath Singh in Lucknow.


Pawan Pandey will contest on BSP ticket from Sultanpur against BJP’s Varun Gandhi.

Kumari Mayawati is an Indian politician who served four terms as Chief Minister of Uttar Pradesh (UP) as head of the Bahujan Samaj Party (BSP), which focuses on a platform of social change to improve the welfare of the weakest strata of Indian society—the Bahujans or Scheduled Castes/Scheduled Tribes, Other Backward Classes,
religious minorities and the poor brahmins, baniyas and kshatriyas. She was Chief Minister briefly in 1995 and
again in 1997, then from 2002 to 2003 and from 2007 to 2012.


Mayawati’s
rise from humble beginnings has been called a “miracle of democracy”.
In 1993 Mayawati formed a coalition with the Samajwadi Party and became
the youngest Chief Minister of Uttar Pradesh at that time. She was the
first female Scheduled Caste Chief Minister. In 1997 and in 2002 she was

Chief Minister, the second time for a full term.

Mayawati’s
tenure has attracted praise. Millions of SC/STs/OBCs/Minorities/ poor
brahmins, baniyas and kshatriyas view her as an icon, and refer to her
as Behen-ji
(sister). She has been praised for her fundraising efforts on behalf of
her party and her birthdays have become major media events and a symbol
for her supporters. They are attempting to hand over the MASTER KEY
i.e., entire budget of the country to her to unlock all doors of
progress and development for all societies (Sarva Samaj) for their
welfare, happiness and peace. Ultimately for  them to attain Eternal
Bliss as Final Goal.

2007: BSP majority


Uttar Pradesh, most populous state and one of its poorest, is
considered pivotal in the politics because of its large number
of voters. BSP won a majority in the 2007 Uttar Pradesh Assembly elections, fielding candidates from a variety of castes and religions.

Mayawati was sworn in as Chief Minister of Uttar Pradesh for the fourth
time on 13 May 2007. She announced an agenda that focused on providing
social justice to the weaker sections of society and providing
employment instead of distributing money to the unemployed. Her slogan
was to make “Uttar Pradesh” (”Northern Province”) into “Uttam Pradesh”
(”Excellent Province”). Mayawati instituted reforms to introduce transparency into the
recruiting process, including posting the results of selection exams
online.

The
BSP won 20 seats in Lok Sabha from the state of Uttar Pradesh in the
2009 elections, obtaining the highest percentage (27.42%) of votes for
any political party in the state. The party placed third in terms of
national polling percentage (6.17%).On 13 March 2012 she filed
nomination papers for the Rajya Sabha, and she was declared elected
unopposed on 22 March. Now it will cross 67 seats.

On 15 November 2011, Mayawati’s cabinet approved partitioning Uttar Pradesh into four different states for better administration and governance.

Mayawati has seen through to completion several of her dream projects,
including the Manvyar Shri Kanshi Ramji Green (Eco) Garden (inaugurated
March 2011), the Rashtriya Scheduled Castes/Scheduled Tribes Prerna Sthal and Green Garden (inaugurated October 2011), and the Dr Bhimrao Ambedkar Samajik Parivartan Prateek Sthal (opened November 2012).

The Forthcoming Elections of 2014 are very crucial to
the survival of our Democracy, as in these elections,

Democracy Friendly Election
Commission must  all efforts to include all eligible citizens as
voters & removed names from the voters list to  be included. And
also to make public the OPEN SOURCE CODE of the Electronic Voting
Machines that are not TAMPER PROOF.


After
meeting a group of fund managers and stock brokers in Mumbai on
Wednesday, Anil Singhvi, investment banker and former managing director
of Ambuja Cements, attended by close to 50 fund managers and brokers,
was held at Bajaj Bhavan in Nairman Point. Stockbroker Ramdeo Agrawal
have already realised that there wont be any choice between anyone and
Mayawati for Prime Minister, for VOTERS would be in her favour.


There is a big noise
about declaring the Prime Ministerial candidate by many parties. This is very
much opposed to our system of democracy, where first the Members of
parliament are elected who in turn elect the Prime Minister. These parties wants
to take the matters in the direction of Presidential system of
elections, which has different sets of problems and is unsuitable for a
country with diversity like ours.

A big section of Democracy Friendly media, social media
and section of social classes; middle classes in particular have started
creating an atmosphere as if BSP is the only solution to our problems.

http://news.bspindia.org/hindi/

BJP WILL GET ONLY 4-5 SEATS IN UP. MODI HIMSELF WILL LOSE IN VARANASHI.

BJP IS NOWHERE IN UP, EXCEPT IN MEDIA AND IN PAID RALLY.

http://timesofindia.indiatimes.com/india/Some-ministers-opposed-to-PMs-visit-to-Lanka-for-CHOGM/articleshow/25072461.cms?messageid=24693106&intenttarget=no&r=1395812071228

The Times of India


awakenmedia(Bengaluru)
Democracy
Friendly Election Commission must all efforts to include all eligible
citizens as voters & removed names from the voters list to be
included. And also to make public the OPEN SOURCE CODE of the Electronic
Voting Machines that are not TAMPER PROOF.

After meeting a group of fund managers and stock brokers in Mumbai on
Wednesday, Anil Singhvi, investment banker and former managing director
of Ambuja Cements, attended by close to 50 fund managers and brokers,
was held at Bajaj Bhavan in Nairman Point. Stockbroker Ramdeo Agrawal
have already realised that there wont be any choice between anyone and
Mayawati for Prime Minister, for VOTERS would be in her favour.

There is a big noise about declaring the Prime Ministerial candidate by
many parties. This is very much opposed to our system of democracy,
where first the Members of parliament are elected who in turn elect the
Prime Minister. These parties wants to take the matters in the direction
of Presidential system of elections, which has different sets of
problems and is unsuitable for a country with diversity like ours.

A big section of Democracy Friendly media, social media and section of
social classes; middle classes in particular have started creating an
atmosphere as if BSP is the only solution to our problems.
BJP WILL GET ONLY 4-5 SEATS IN UP. MODI HIMSELF WILL LOSE IN VARANASHI.

BJP IS NOWHERE IN UP, EXCEPT IN MEDIA AND IN PAID RALLY.

THANX FOR YOUR WISE DECISION
TO VOTE FOR BSP
AND
TO HAND OVER THE MASTER KEY TO BAHEN MAYAWATI JI AS NEXT PRIME
MINISTER MAHA MAYAWATI JI
OF
PRABUDDHA BHARATH


78) Classical Urdu
http://dailyaag.com/phase2/%D8%A8%D8%BA%DB%8C%D8%B1-%D9%88%D8%A7%D8%B1%D9%86%D9%B9-%D8%A7%D8%B3%D9%BE%D8%AA%D8%A7%D9%84-%D9%85%DB%8C%DA%BA-%D8%AF%D8%A7%D8%AE%D9%84-%DB%81%D9%88%D9%86%DB%92-%D9%88%D8%A7%D9%84%D9%88%DA%BA-%DA%A9/#comment-127988

جمہوریت چھپنے میڈیا میں
78) کلاسیکی اردو



  • Your comment is awaiting moderation.

    Awakenmedia

    78) کلاسیکی اردو

    مفت آن لائن ای نالندا تحقیق اور پریکٹس یونیورسٹی

    پر مجھے ای میل
    awakenmedia.prabandhak @ gmail.com پر
    chandrasekhara.tipitka @ gmail.com پر
    بسپا بنگلور مرکزی لوک سبھا نرواچن

    کے لئے
    SARVAJAN HITAYA SARVAJAN SUKHAYA فلاح و بہبود اور تمام معاشروں غالب PRABUDDHA BHARATH کی خوشی
    سماج کے تمام طبقوں سے پیار حاصل کی جو سب سے بہتر گورننس کے ذریعے ایک ثابت ایڈمنسٹریٹر

    BEHEN KUM . مایاوتی جماعت اسلامی

    اس ماہا مایاوتی Prabuddha Bharath کے اگلے وزیر اعظم بنانا

    موہن راج امیدوار بنگلور سنٹرل

    کے درمیان براہ راست جنگ
    SARVAJAN HITAYA SARVAJAN SUKHAYA – ایک حقیقی سیکولر تحریک
    اور
    چپکے سامپرداییک فرقے

    کرنے کے لئے
    service.govdelivery.com کے ذریعے وائٹ ہاؤس
    وائٹ ہاؤس info@messages.whitehouse.gov

    بنیادی طور پر کیونکہ بات چیت میں لوگوں کی اہم .

    لوگوں کی حکومت کی انشورنس سکیم کے لاکھوں کے ساتھ ساتھ مندرجہ ذیل پر عمل کر سکتے ہیں:

    1) صبح 3:30 بجے اٹھنا .
    2) غسل
    3) جسم کے تمام حصوں کو منتقل .
    4) ایک گھنٹے کے لئے ایک واک یا تیر کے لئے جانا
    5) روزہ وقفے کے ساتھ
    T ٹماٹر 1 گاجر ، گوبھی ، 4 پھلیاں ، 4 مٹر ، 1 معلومات کول ، 2 چھوٹے
    گوبھی کے ٹکڑے ٹکڑے کر ، تھوڑا مونگ کی دال ، سرسوں کا چھوٹا سا ٹکڑا ،
    ٹکسال تیل کھانا پکانے کے 1tbl چمچ کے ساتھ گرم تمام خشک پتے . ابلا ہوا
    براؤن چاول ، تور دال کی 2 TBL چمچ 2 ٹیبل چمچ ابال اور چھوٹی سی کالی مرچ
    اور نمک اور بیداری ( AOA ) نعمتوں کے ساتھ اس بیدار ایک کی ایک گیند کے
    ساتھ ان کے ساتھ شامل .
    6) دوپہر کے کھانے
    ( AOA ) نعمتوں کے ایک کٹورا کھایا جا سکتا ہے .
    تمام دن طویل Dukkha ( مصائب اور تکلیف موجود ہیں اور بھی Dukkha Nirodha
    مصائب اور تکلیف کے (آخر) بھی موجود ہے کے طور پر ہر چیز کو تبدیل کرنے کی
    ہے کہ ایک واضح تفہیم کے ساتھ ایک تحمل ذہن کے ساتھ آپ کے دماغ میں پرسکون ،
    پرسکون ، الرٹ ، توجہ ، کو برقرار رکھنے کے .

    ملاحظہ کیجیے:

    http://sarvajan.ambedkar.org
    زیادہ سے زیادہ خوشی کے لئے .

    ایک ہمدردی کا بیان اور بیداری کے ساتھ بیدار ایک کی شفقت – مایاوتی “-
    میں اقتدار میں ہوں یا نہیں ، میں نے Sarvasamaj لئے لڑنے کے لئے جاری رہے
    گی . میں ایک ضد انسان ہوں” ، انہوں نے کہا کہ .

    دونوں کانگریس کی اقتصادی پالیسیوں پر الزام لگا زیر قیادت یوپی اے حکومت اور
    پچھلے بی جے پی ( Bahuth Jiyadha پاپی ) مرکز میں این ڈی اے حکومت کی قیادت
    کی ، وہ ” کالے دھن کی ایک بڑی رقم غیر ملکی بینکوں میں زیر گردش ہے جبکہ
    کانگریس اور نہ ہی بی جے پی اور نہ ہی اسے واپس لانے کے لئے کسی بھی کوشش
    کی تھی . نے کہا کہ”

    “سیاہ پیسے واپس لایا جاتا ہے ، غریب کو درپیش مسائل ، تخسوچت ذات اور
    قبائلیوں کے سب سے زیادہ اقتدار میں ان پر اس طرح کے قدم نہیں ہے ، آنے کے
    لئے ہر وقت کے لئے ختم ہو جائے . لیکن ، ” انہوں نے کہا . محترمہ مایاوتی
    وزیر اعظم سیاہ پیسے واپس لے آئے گا ہو جاتا ہے کے بعد 67 سال کے بعد سپریم
    کورٹ نے 26th پر مارچ 2014.Only پر اس نقطہ نظر کی توثیق کی .

    “میں بی جے پی اور اڑیسہ کے آر ایس ایس کے وزٹرز کا دور دراز کے علاقوں
    سے ہے اور ان کے معیار زندگی کو تبدیل کرنے کے لئے reconversion لئے جانے
    کے لئے قبائلیوں اور تخسوچت ذات قائل لوگوں میں مذہب تبدیل کرنے کے لئے
    نہیں کہہ رہا ہوں کہ اس کو سمجھنے ، لیکن ریاست اور مرکز میں دونوں حکومتوں
    ، ” مایاوتی یہاں ایک عوامی اجلاس میں بتایا .

    اڑیسا کی آبادی کا تقریبا 50 فی صد ذات قبائلیوں پر مشتمل اور تخسوچت کہ
    بیان ، مایاوتی بھی 65 سال آزادی کے بعد غریب عوام کی کوئی ترقی نہیں کیا
    گیا تھا . انہوں نے یہ بھی اوپری ذات برادریوں کے درمیان غریب لوگوں کی
    plights پر روشنی ڈالی .

    غربت اور بائیں بازو کے انتہا پسندی کی ترقی کے لئے ذمہ دار بے روزگاری
    کا انعقاد ، مایاوتی کی حکومت معاشرے کے غریب ارکان کے اتتھان کے لئے
    اقدامات لیا تو ماؤ نواز لعنت یقینی طور پر نیچے آئے گی .

    وہ اڑیسا اور کانگریس اور بی جے پی کی طرف سے حکومت دوسری ریاستوں کی
    وجہ سے ریاست اور مرکز میں حکومتوں کی ناقص پالیسیوں کی عمر کے لئے غریب
    اور پسماندہ رہے . ” مرکز میں برسراقتدار آنے کی صورت ہم نے ایک خاص قسم کی
    ریاست کی حیثیت سے اڑیسہ کی مانگ کو پورا کرے گا ، ” مایاوتی نے کہا .

    “ہم نے اتر پردیش میں غربت کم اور بے زمین لوگوں کو اقوام متحدہ کی
    استعمال سرکاری زمین تقسیم کی . اسی کہیں اور اڑیسہ میں کیا جا سکتا ہے ، ”
    انہوں نے کہا .

    کے بعد دو کے انتخابات میں بی ایس پی کے امیدواروں کے لئے ووٹ ڈالنے کے
    لئے لوگوں سے اپیل ، مایاوتی “ہم . بسپا کے تمام 21 لوک سبھا میں امیدواروں
    ڈال دیا ہے ریاست میں کسی کے ساتھ اتحاد ہے اور اڑیسہ کی 147 اسمبلی حلقوں
    نہیں ہے.” انہوں نے کہا کہ

    تصویر میں مایاوتی کے ‘ Savdhan وشال ماہا ریلی ‘ لکھنؤ میں
    لکھنؤ : بی ایس پی سپریمو مایاوتی وہ اس کی 58th سالگرہ کے موقع پر لکھنؤ
    میں ایک ‘ Savdhan وشال ماہا ریلی ‘ خطاب کر رہے تھے آئندہ لوک سبھا
    elections.She میں اسے اکیلے جانے گا کہ اشارہ دیا .

    مایاوتی وہ غریب لوگوں کو بی ایس پی کی ریلی میں شرکت کی خوشی ہے کہ تھا
    . “ہم جعلی طاقت دکھانے کے لئے بس یا ٹرین کی طرف سے لوگوں کو لانے کے
    نہیں . میں بہت سے لوگوں کو گرمی کی شدید کے باوجود اجلاس میں شرکت کی خوشی
    ہے کہ ، ” انہوں نے کہا .

    مایاوتی کانگریس ، بی جے پی اور سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے تمام
    Sarvasamaj کے فائدے کے لئے سیاست میں بڑھتی ہوئی کی طرف سے ، اس ، تخسوچت
    ذات عورت کو روکنے کے لئے cahoots میں کام کر رہے تھے . وہ صحیح راستے پر
    ہے، کیونکہ وہ ایسا . جیسے ہی وہ دیکھنے، سننے یا اس سے بھی وجہ سے دماغ کی
    میلا کرنا وہ پریشان اور تمام وقت انتہائی قدیم سے ان کی طرف سے سامنا
    کرنا پڑا کچھ نہیں ذہنی بیماری ہیں جو نفرت ، غصہ ، حسد کی مشتعل حاصل ایک
    اسپرشی کے بارے میں سوچنا . حل ان کے عام ہو کرنے کے لئے پاگل خانے میں ان
    کا علاج کرنے کے لئے ہے .

    وہ بی ایس پی شامل پالیسیوں کے لوگوں کو مطلع کرنے کے لئے ملک کے ہر
    کونے کھدرے میں پرستار باہر پارٹی کارکنوں اور حامیوں کو حوصلہ افزائی کی .

    وہ بہوجن سماج پارٹی کے خلاف سیاسی حریفوں کے “ووٹ کی منتقلی” کی حکمت
    عملی کا مقابلہ کیا جاتا ہے کہ یقینی بنانے کے لئے ان سے پوچھا .

    “ہم صرف دوسروں کے بارے میں شکایت نہیں رکھ سکتے ، ہم نے اپنے مخالفین
    کے اس مذموم ڈیزائن کو شکست دینے کی حکمت عملی وضع کرنا ضروری ہے ، ” انہوں
    نے منظوری میں دھاڑتا جس بھیڑ ، بتایا .

    مایاوتی تمام طبقوں کے لوگوں کے ، ” سرو سماج ” ( معاشرے کے تمام ) ،
    تخسوچت ذات ، تخسوچت جنجاتیوں اور دیگر سمیت تمام طبقات اور ذات ، سے لوگوں
    کو متحد کریں گے جس میں بی ایس پی کی چھتری ، کے تحت لایا جاتا ہے اس بات
    کا یقین کرنے کے لئے اس کے حامیوں سے پوچھا پسماندہ طبقوں .

    یہ بیان کرنے کے لئے بیداری کے ساتھ بیدار ہے جو صرف قومی رہنما BEHEN
    MAYAWATIJI کے لئے ماہا MAYAWATJI ، PRABUDDHA BHARATH کے اگلے وزیر اعظم
    سے اس کو اوپر اٹھاتا ہے .

    ان کی پارٹی صرف 2009 میں 20 لوک سبھا نشستوں پر کامیابی حاصل کرتے
    ہوئے، اس کے امیدواروں کو 47 نشستوں میں دوسری کھڑا طرف اشارہ کرتے ہوئے ،
    Sarvasamaj رہنما ، وقت بھی ان نشستوں پر توجہ مرکوز کرنے کے لئے آیا ہے تا
    کہ پارٹی کے بیگ میں نشستوں کی زیادہ سے زیادہ تعداد ریاست .

    مرکزی جماعتوں نے اس کے خلاف تحقیقات کے مرکزی بیورو ( سی بی آئی) ہوا
    ہے کہ الزام ، مایاوتی وہ 2003-2006 کے درمیان اس گھیر کہ ایک سیاسی ڈائن
    شکار کا شکار تھا .

    ریلی میں شرکت کے لئے شدید سردی braved جو لوگوں کے ساتھ ایک جذباتی راگ
    پر حملہ کرنے کی کوشش کے دوران “میں نے ان سالوں کے درمیان مصیبت میں
    دھکیل دیا ، لیکن مجھے امید کھو دیا ہے اور اس کے بعد میری طرف سے کھڑے
    تمام وہ لوگ جو شکر گزار ہوں کبھی نہیں تھا ، ” انہوں نے کہا .

    اچھوت وہ اس طرح دہشت گردی اٹھانے ان کی اعلی ترقی یا ترقی کے لئے اہل
    بن صحیح PATH.WHENEVER پر ہمیشہ رہے ہیں کیونکہ یہ دوبارہ INTOLERANCE.THEY
    نے اس کے پاگل پن سے ثابت ہوتا ہے . ایم ایس MAYAWATJI وزیر اعظم کے لئے
    اہل ہو گیا ہے اب وہ پریشان ہیں اور اس کی وجہ ان کی روایتی نفرت اور
    JEALOUSYTHAT کے غصہ ہو ذہنی خرابی کی شکایت اور بیماری وہ دیکھ ، جب سنا
    یا اس سے بھی ایک اسپرشی تخسوچت ذات کے بارے میں سوچو یا ہے جو دماغ کے کچھ
    بھی نہیں لیکن کلنک ہیں قبیلہ . واحد حل تمام ریاستی اور مرکزی انتخابات
    میں شکست دینے کے بعد پاگل خانے میں ڈال دیا ہے. یہ ہوگا .

    اس ملک میں سب پر اپنے اپنے مصنوعی طور پر پیدا جاتیوں مذاہب اگرچہ ایک
    ہی نسل سے تعلق رکھتے ہیں . ہندتو کی آر ایس ایس کی BAHUTH JIYADHA PAAPIS
    (بی جے پی ) کی طرف سے تشکیل ایک فرقے کیونکہ ان کے لالچ کی براہ راست
    مسلمانوں، عیسائیوں اور بالواسطہ طور پر SCST / او بی سی / اقلیتی / غریب
    برہمن ، BANIYAS اور KSHATRIAS ذہنوں کو الجھانے کے لئے ان کی تخلیق امبانی
    ADANI PAAPIS ( AAP ) کی حمایت کی ہے باہر ان بہادر اور بولڈ لوگوں کی بے
    خوفی محسوس کے ساتھ اس ملک کی تمام دولت لوٹ کی طاقت .

    دیوتاوں اور ساتھ MAARAS ، BRAHMAS اور RECLUSES اور برہمن میں کسی کو
    ان کے دماغ کو الجھانے سکتا دیکھتے ہیں، یا ان کے دل سپلٹ ، یا ان کے پاؤں
    کی طرف سے اٹھائے نہیں کی کمیونٹی کے ساتھ مردوں کی اس دنیا میں دریا کے
    دوسری انہیں بینک پھینک کر سکتے ہیں .
    “ایمان ، ، آدمی کو سب سے دولت ہے اچھی طرح مشق تعلیم pleasantness لاتا ہے
    . ذوق حقیقت کی ایک زندہ کی آجیاختا سمجھداری سے پہلے کہا جاتا ہے سب سے
    آگے ہے . ”

    ” کوشش نا خوشگواری ختم ہو جاتا ہے کے ساتھ ایمان کے ساتھ ، سیلاب ،
    سمندر ابیم کے ساتھ ، سے تجاوز کر جاتا ہے ، اور حکمت طہارت کے ساتھ آتا ہے

    ، تندہی سے اس کی سننے اور discriminateingly حکمت حاصل ہے کہ وہ ختم ہونے کے حاصل کرنے کے لئے کامل حالت میں ایمان اور تعلیم رکھ .

    وہ مناسب پیدا کوشش تجربہ تعلیم کے ساتھ yoked . سچائی کے ذریعے محترمہ
    MAYAWTI جماعت اسلامی کے مشہور ہو گیا اور دینے کی طرف سے ووٹروں کے پابند
    ہیں .

    سچائی ، تربیت ، حق کو دیکھیں اور سخاوت اگر کوئی ایمان کے ساتھ ایک گرہست کرنے کے لئے ، ، وہ یا وہ اس کے بعد غمگین نہیں کرے گا .

    اب بہت سچائی ، تربیت ، سخاوت اور تحمل ظاہر یہاں ہے، چاہے ، ، چلو دیگر recluses اور برہمن سوال ، جاننا .

    recluses اور برہمن سے ، اب سوال کیا ہے . آج میں اگلی حکومت کے لئے ضروری ہے کیا پتہ .

    یہ بیدار ایک اس دنیا میں آیا ہے کہ ہمارے اچھے کے لئے ہے ، اب ہم جن کو دی VOTE زیادہ پھل کی ہے ، جانتے ہیں کہ .

    ” اب ہم سب کو زگانے PRABUDDHA BHARATH کے اگلے وزیر اعظم کے طور بیداری
    ماہا MAYAWATIJI کے ساتھ ایک ENTHRONE کرنے کے لئے بی ایس پی ہاتھی کے لئے
    ماسٹر کی کلید حاصل کرنے کے لئے ووٹ کے لئے پوچھ، گاؤں سے گاؤں اور شہر سے
    شہر میں جائیں گے .

    بی ایس پی 2017 کے ریاستی اسمبلی انتخابات میں اتر پردیش میں مکمل
    اکثریت کے ساتھ اقتدار میں واپسی کو یقینی بنانے کیلئے پارٹی کارکنوں اور
    حامیوں پر زور دیا ، مایاوتی ریاست لوک سبھا کے لئے بی ایس پی کے ارکان کی
    زیادہ سے زیادہ تعداد بھیجتا ہے اس بات کا یقین کرنے کے لئے ان سے پوچھا .

    آپ کا دانشمندانہ فیصلہ
    ہاتھی بی
    اور
    BAHEN مایاوتی جماعت اسلامی کے اگلے وزیر اعلی مایاوتی جماعت اسلامی کے لیے شاہ کلید کے حوالے کرنے
    کے
    PRABUDDHA BHARATH

    ، کھڑے بیٹھے یا اس سے بھی جھوٹ بول رہا ہے ، اس کو موڑنے والا ہے اور ھیںچ ، چلتے وقت ، ان کے جسم کی نقل و حرکت کر رہے ہیں .

    ایک دوسرے کے ساتھ پابند ہڈیوں اور رگوں گوشت اور جلد کے ساتھ احاطہ
    کرتا ہے ، جسم کی جلد کے ساتھ احاطہ کرتا ہے ، اور حقیقی ریاست نہیں دیکھا
    ہے .

    کے اندر بھرا ہوا ہے ، پیٹ اور جگر کی جنسی اعضاء کے ساتھ بھرا ہوا ہے ، تو بھی دل ، پھیپھڑوں ، گردوں اور تللی کے ساتھ .

    یہ بھی snot ، تھوک ، پسینے اور تیل جسم کے ، خون کے ساتھ ، جوڑوں ، پت کے تیل اور سخت تیل سے بھرا ہوا ہے .

    اس کے بعد نو بیرونی دروازے سے گندگی کو ہر وقت چھپانا. آنکھوں اور کانوں کے ذریعے سراو ہیں .

    نہیں ناک سے اور منہ قے کے ذریعے آنے والے snot ہے ، تو بھی پت یا بلغم تمام جسم پسینے trickles سے ، قے ہے .

    اس کے سوراخ کے scull میرو سے بھرا ہوا ہے ، موہت مورھ یہ قابل قبول کچھ ہے سوچتا ہے .

    وہ اس کی پیٹھ ، مردہ فولا ہوا پر واقع ہے اور نیلے رنگ ، اور charnel
    زمین میں پھینک دیا گیا تو انہوں نے ان کے رشتہ داروں کی ملکیت نہیں ہے .

    یہ کھانے کے بھی کتوں ، گیدڑوں ، بھیڑیوں اور کیڑے ، کووں اور ہاکس کی طرف سے کھایا ، اور وہاں جو کچھ بھی دوسری مخلوق ہو جاتا ہے .

    باشعور ایک کے الفاظ سن bhikkhu ، ، وار ہو جاتا ہے یہ واقعی ہے کے طور پر جسم میں لگ رہا ہے ، اور اچھی طرح اس کے سیکھتا ہے .

    اس طرح وہ اندرونی اور بیرونی جسم کے لئے دلچسپی کا خاتمہ ، اس کے جسم
    کے طور پر ہے ، تو میں ہو جائے گا: اب میں ہوں کے طور پر ، اس کے جسم بھی
    تھا .

    جسم کے لئے دلچسپی اور لالچ زائل bhikkhu وار ہو جاتا ہے . deathless صلح Realises اور ختم ہونے کا تجربہ

    یہ دو پیروں بات ایک برا بو دے گندگی ہے . یہ گندگی کے مختلف قسم کے بھرا ہوا ہے اور یہاں اور وہاں ان strews .

    ایک conceitedly سوچتا ہے تو اس طرح کے ایک جسم کے ساتھ ، ، یا وہ دوسروں کے کم بات کرتی ہے تو ، کیا یہ حکمت میں کمی سے زیادہ ہے .
    یہ کیوں Jathiveri ! Madhveri ! koalveri ! Kolaveri ! کانگریس کے ، BAHUTH
    JIYADHA PAAPIS (بی جے پی ) اور امبانی ADANI پاپی ( AAP ) دی ! ہے!

    http://www.indiatvnews.com/politics/national/in-pics-mayawati-s-savdhan-vishal-maha-rally-in-lucknow-14406.html?page=1

    وہ اس ریلی “لیکن durries ( میٹ ) پر بیٹھ کر ان لوگوں کے جو ، کرسیوں
    پر بیٹھے ” لوگوں کا نہیں تھا کا کہنا ہے کہ ، دیگر جماعتوں میں ایک ڈی آئی
    جی لیا .

    وہ کٹر حریف سماج وادی پارٹی کے ھدف اور اتر پردیش میں ایک مافیا حکومت چلانے کے یہ الزام لگایا ہے .

    ریاست کے ایک ” جرم پردیش ” میں تبدیل کر دیا ہے ، وہ صدر راج کے نفاذ کا مطالبہ کیا ، انہوں نے کہا کہ .

    آفس میں اس کی دوسری مدت کے دوران مرکز میں متحدہ ترقی پسند اتحاد کی
    حکومت کی حمایت کے باوجود ، مایاوتی کانگریس کی قیادت والی حکومت پر شدید ،
    اور افراط زر ، اقتصادی سست روی ، قیمت اضافہ ، بڑھتی ہوئی بے روزگاری ،
    معاشرے میں بڑھتی ہوئی عدم مساوات ، پالیسی کے لئے یہ الزام لگایا فالج ،
    داخلی سلامتی اور ایک کمزور خارجہ پالیسی کے لئے خطرہ .

    مایاوتی کی وجہ سے مظفر فسادات کی گزشتہ سال کی طرح اس کی سالگرہ کا جشن منانے کا فیصلہ کیا تھا .

    اس کے بجائے وہ لکھنؤ میں Ramabai امبیڈکر میدان میں ‘ Savdhan وشال ماہا ریلی ‘ کو حل کرنے کا فیصلہ کیا ہے .

    چھ ہاتھی کے مجسموں صحیح مرحلے کے سامنے کھڑا کیا گیا تھا . ان مجسموں
    کو بنانے کے لئے ، مجسمہ ساز ، خاص طور پر کولکتہ سے کہا جاتا تھا .

    ان چھ ہاتھیوں سے ، چار ہاتھیوں گراؤنڈ ( بسپا کے انتخابی نشان ) کی طرف
    جھوٹ بول ان ٹرنک ہے اور باقی دو ہاتھیوں رخ آسمان کی طرف ان کے تنوں ہے ،
    victory.Mayawati کی علامت بھی اپنی خودنوشت کے نویں حجم جاری ” Bhajun
    تحریک اس ریلی میں صرف جدوجہد کی atmakatha ” .

  • http://www.indianist.com/india-general-election-lok-sabha-election-2014-results/ # تبصرہ 21294

    http://ijnet.org/blog/how-transmedia-reporting-could-make-journalism-investigations-more-transparent#comment-34649
    IJNet -
    IJNet – http://www.ndtv.com/elections/article/election-news/op-ed-jaswant-singh-bjp-s-odd-one-out-499005?pfrom=home-elecdec13_allnews
    لوک سبھا انتخابات 2014
    لوک سبھا انتخابات 2014http :/ / http://www.tehelka.com/beware-the-class-conflict/
    Tehelka.comTehelka.com

    https://plus.google.com/+foxsearchlight/posts

    فوکس سرچ

    http://japanfocus.org/-Jon-Mitchell/4097

    http://www.hindustantimes.com/comment/rajdeepsardesai/time-for-media-to-turn-the-gaze-inwards/article1-1199548.aspx

    http://www.indiatvnews.com/politics/national/in-pics-mayawati-s-savdhan-vishal-maha-rally-in-lucknow-14406.html?page=1
    اتر پردیش

    بی ایس پی سے 80 امیدوار Loksabha الیکشن 2014 کے لئے نام | بہوجن سماج پارٹی اتر پردیش میں 80 نشستوں پر مقابلہ

    مایاوتی وہ پہلے ہی ریاست میں زعفران پارٹی کے ساتھ چلا گیا ہے اور اس
    نظریے میں کوئی تبدیلی نہیں کیا گیا تھا کے طور پر دوبارہ ایسا نہیں کرے گی
    .

    بی ایس پی سے 80 امیدوار Loksabha الیکشن 2014 کے لئے نام | بہوجن سماج
    پارٹی اتر پردیش میں 80 نشستوں پر مقابلہ . مایاوتی نے اپنی پہلی فہرست میں
    سماجی، انجینئرنگ دکھا .

    بی ایس پی کشتریوں پر ، برہمن پر پسماندہ طبقوں ، مسلمانوں کے لئے 19 ، 8 سے لوگوں کو 15 ٹکٹ 21 دی ہے

    بی ایس پی پارٹی کے ستیش چندر مشرا جنرل سیکرٹری وارانسی Loksabha
    نشستوں میں بی جے پی کے وزیر اعظم کے عہدے کے امیدوار Naredra مودی پر لینے
    کے لئے

    Aonl Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام محترمہ سنیتا شاکی
    Azamgar Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام شاہ عالم عرف گڈو جمالی
    Badayu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام اکمل خان عرف چمن
    Baghpa Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام پرشانت چوہدری
    Bahraic ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام ڈاکٹر وجے کمار
    بللی Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام وریندر کمار پاٹھک
    Balrampu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام لالجی ورما
    بینڈ Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام آر کے سنگھ پٹیل
    Bansgao ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Sadal پرساد
    Barabank ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام کملا پرساد راوت
    Bareill Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام امیش گوتم
    میں Bast Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام رام پرساد چوہدری
    Bhadoh Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Rakeshdhar ترپاٹھی
    Bijnor Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام الملوک نگر
    Bulandshaha ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام پردیپ Jatav
    Chandaul Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام انل کمار موریا
    Deori Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام نیاز خان
    Dhaurhar Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام داؤد احمد
    Dumariyagan Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام محمد مقیم
    اور Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام انجینئر نور محمد
    Etawa ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Ajaypal سنگھ Jatav
    Faizaba Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام جتیندر سنگھ عرف ببلو
    Farrukhaba Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Jaiveer سنگھ
    Fatehpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام افضل صدیقی
    Fatehpu Sikr Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام محترمہ سیما اپادھیائے
    Firozaba Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام ٹھاکر Vishwadeep سنگھ
    Gauta بوڈ نگا Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام ستیش Awana
    Ghaziaba Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام مکل اپادھیائے
    Ghazipu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Kailashnath سنگھ یادو
    Ghos Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام دارا سنگھ چوہان
    Gond Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام اکبر احمد Dumpy
    Gorakhpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Rambhual نند
    Hamirpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام راکیش گوسوامی
    Hardo ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی کے امیدوار شیو پرساد ورما کا نام
    Hathra ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام منوج کمار سونی
    Jalau ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Brijlal Khabri
    Jaunpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام سبھاش پانڈے
    Jhans Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام محترمہ انورادھا شرما
    Kairan Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام کنور حسن
    Kaisergan Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام کرشن کمار اوجھا
    Kannau Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام نرمل تیواری
    Kanpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام سلیم احمد
    Khir Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام اروند گری
    Koshamb ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام سریش Passi
    Kushinaga Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام سنگم مشرا
    Lalgan ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام ڈاکٹر Baliram
    Luckno Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام نکل دوبے
    Machhlishah ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام وی پی سروج
    Maharajgan Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Kashinath شکلا
    Mainpur Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام ڈاکٹر Sanghamitra موریا
    ماتھر Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام پنڈت یوگیش کمار دویدی
    Meeru Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام حاجی شاہد اخلاق
    Mirzapu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام شریمتی سمندر باندھنا
    Misrik ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام اشوک راوت
    Mohanlalgan ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام آر چوہدری
    Moradaba Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام حاجی یعقوب قریشی
    Muzaffarnaga Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام قادر رانا
    ناگن ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام گریش چندر Jatav
    Phulpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Kapilmuni Karwaria
    Pilibhi Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام انیس احمد عرف پھول بابو
    Pratapgar Loksabha نشستیں بی ایس پی کے امیدوار آصف نظام الدین صدیقی کا نام
    رضی اللہ عنہ بریلی Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Pravesh سنگھ
    Rampu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام حاجی اکبر حسین
    Robertsgan ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام شاردا پرساد
    سہارنپور Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام جگدیش رانا
    Salempu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام روی شنکر سنگھ عرف پپو
    Sambha Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام Aqilurehman خان
    سان کابی نگا Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام بھیشم شنکر تیواری عرف Kushal تیواری
    Shahjahanpu ایس Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام امید سنگھ کشیپ
    Sitapu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام شریمتی قیصر جہاں
    Sultanpu Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام پون پانڈے
    Unna Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام برجیش پڑھنے
    وارانسی Loksabha نشستیں بی ایس پی امیدوار کا نام وجے پرکاش جایچووال
    ریاست میں اسے اکیلے جانے کی بی ایس پی ، 21 امیدواروں کی فہرست جاری

    ریاست میں 28 لوک سبھا نشستوں میں اس کے امیدوار کھڑے کرنے کا فیصلہ کیا
    ہے جس میں بہوجن سماج پارٹی ( بی ایس پی ) ، ، جمعہ کو یہاں 21 امیدواروں
    کی پہلی فہرست جاری کی ہے .

    پارٹی کے امیدواروں کی فہرست جاری ، انچارج کرناٹک اشوک Sidharth کے لئے
    پارٹی بسپا دیگر جماعتوں کے ساتھ کسی بھی انتخابی معاہدہ نہیں ہے اور اپنے
    طور پر انتخابات لڑنے گی .
    بہوجن سماج پارٹی تین خواتین میدان میں فیصلہ کیا ہے کہ بیان .

    بہوجن سماج پارٹی کے تمام لوک سبھا کے 2014 امیدوار یہ تعداد ایک سب سے
    بڑی نڈر ، کسی بھی اتحاد کے بغیر ، سرو سماج Hitaya سرو سماج Sukhaya تحریک
    یعنی ، سپریم کورٹ / جنجاتی / او بی سی / اقلیتی / غریب برہمن ، baniyas ،
    کشتریوں سمیت تمام معاشروں ‘ حلف لے لیا ہے فلاح و بہبود ، خوشی ، امن
    محترمہ ماہا مایاوتی ، PRABUDDHA BHARATH کی جمہوریت چھپنے بہوجن سماج
    پارٹی کے مستقبل کے وزیر اعظم (بسپا) آئین تحریک میں ہے شامل کے طور پر –
    نیلسن منڈیلا کی تحریک سے ماخوذ .

    تمام امیدواروں سرو سماج میں تبدیل کرنے کے لئے ملک کی شہری کے ساتھ کام
    کر رہے ہیں . ، تمام معاشروں اقتصادی آئین میں شامل کے طور پر .

    ایک صاف تصویر کے ساتھ ، وہ Dukkha یعنی ، مصائب اور تخسوچت ذات /
    جنجاتی / او بی سی / اقلیتوں اور غریب برہمن ، baniyas اور kshatrias کے
    مصائب حاجت کے لئے اور تمام حکومت میں ان کے متناسب نمائندگی کے لئے ان کے
    مشکل کام کے لئے جانا جاتا ہے ، PSU ، نجی شعبے ، زراعت ، تجارت ، ایک
    عوامی بندوں کے طور پر ایماندار اور مخلص گورننس کے ذریعے کاروبار .

    انہوں نے ثابت کر دیا اور شہر کے تمام طبقوں کی زندگی کے حالات کو بہتر بنانے کے لیے ملک کے شہری حکام فعال آدانوں فراہم کی ہے .

    وہ محترمہ مایاوتی کی طرف سے اتر پردیش میں کیا کے طور پر ایک گلوبل
    مصنوعات کی کمپنی کے پیدا کرنے میں سماج کے تمام طبقوں سے تعلق رکھنے والے
    نوجوان ادیمیوں کی رہنمائی کر رہے ہیں .

    وہ آئین کی مدد کے ساتھ بدحالی اور تمام معاشروں کے مصائب کے Dukkha
    Nirodha یعنی ، ختم کرنے کے لئے اور آخر میں ان کو ان کے حتمی مقصد کے طور
    پر ابدی بلس حاصل کرنے کے لئے کام کرتے ہیں .

    بہوجن سماج پارٹی کی اسٹار مہم

    01 بسپا کے قومی صدر – Behan Kum . Mayawatiji

    02 بی ایس پی کے قومی جنرل سکریٹری – ستیش چندر مشرا

    03 کرناٹک آرڈینیٹر – ڈاکٹر اشوک Siddharthji ایم ایل سی (یوپی) 9741155132

    04 ریاستی صدر – Marasandra Muniappa 9845328365

    05 ریاستی کنوینر – Dr.C.S. Dwaraknath 9845459108

    06 ریاستی کنوینر – N.Mahesh 9448468972

    07 ریاست کے خزانچی – Koramangala Muniappa 9741416045

    08 ریاستی جنرل ، سیکرٹری – B.Kamalanabhan 9844019273

    09 ریاستی جنرل سیکر ٹری . – R.Muniappa 9980606657

    10 ریاست Gen.Sec . – Dr.Jayprakash 9845244873

    11 ریاست Exc.Com . رکن Vyjanath Suriyavamshi 9448445060

    12 ریاست Exc.Com.Mem – شہیش Kiwad 9448211071

    13 ریاست Exc.Com کو mem – شیخ بہادر 9448622531

    Gen.sec 14 . – Dr.Rajiv کامبلے 9945714523

    15 جنرل سیکنڈ – آر چینگپپا 9663999277

    16 جنرل سیکنڈ – Hennur Lakxminarayan 9343759849

    17 زونل انچارج – ڈاکٹر دستگیر ملا Mukandar 8971502666

    18 زونل انچارج – Y.Narasappa 9035063387

    19 زونل انچارج – Velaudhan 9448355221

    20 زونل انچارج – شریمتی . ناہیدہ سلمی 9880438471

    21 زونل انچارج – GR Panduranga 7026268288

    22 زونل انچارج – Capt.Somshekar 9448175381

    23 زونل انچارج – Siddhiah 9900117125

    24 زونل انچارج – B.Vittal نایک Dakulagi 7795202668

    24 زونل انچارج – KB واس 9740722317

    25 زونل انچارج – Ravikanth 9945331267

    26 زونل انچارج – Arkalavadi Nagendra 9986865675

    27 زونل انچارج – Eranna Mauri 9844294303

    28 زونل انچارج – Narasappa 9035063387

    29 زونل انچارج – L رمیش Katriguppe 9980187086

    30 بنگلور یوتھ صدر M.Sandeep 9980400454

    31 زونل انچارج – Annadanappa 9663604727

    32 زونل انچارج – گرمورتی 9741349261

    33 زونل انچارج C.Lokesh 9739360973

    34 زونل انچارج – Dharmanna Totapur 8951646504

    35 زونل انچارج – پرکاش بابو 7026677965

    https://www.youtube.com/watch؟v=QPJP0k1fspw
    اتر پردیش آئرن لیڈی کی مایاوتی وزیر اعلی . 42:32 منٹ
    دیکھنے کریں:

    https://www.youtube.com/watch؟v=SSuFZ89nklA
    Behan مایاوتی جی 22،20 منٹ کے ساتھ انٹرویو – ٹاک چلو

    https://www.youtube.com/watch؟v=xYDxdnSwfao
    حصہ 1 42.13 منٹ – صاحب کانشیرام جی کے اہم تقریر

    https://www.youtube.com/watch؟v=AWV2phRShI8
    حصہ 2 40.46 منٹ – صاحب کانشیرام جی کے اہم تقریر

    https://www.youtube.com/watch؟v=kw8Uk_ac5Tw
    حصہ 3 42.40 منٹ – صاحب کانشیرام جی کے اہم تقریر

    https://www.youtube.com/watch؟v=URAjyffdV0Y
    صاحب کانشیرام جی حصہ 4 فائنل Part42.26 منٹ کی اہم تقریر

    https://www.youtube.com/watch؟v=s9wg_d-2PVA
    سوسائٹی 1:39:09 HR کرنے کے لئے ادا کی پیٹھ پر صاحب کانشیرام کی تقریر

    https://www.youtube.com/watch؟v=RcLVO_n5Exg
    کانشیرام جی 31:53 منٹ پر دستاویزی

    https://www.youtube.com/watch؟v=EkdmPMiXjsQ
    دلت ملکہ کماری مایاوتی 18:43 منٹ

    https://www.youtube.com/watch؟v=b2V42LJy6nM
    Mayawati10 کی تاریخ : 26 منٹ

    https://www.youtube.com/watch؟v=mJNeWXeIrsk
    مایاوتی کے قتل کا منصوبہ 28:24 منٹ بے نقاب

    https://www.youtube.com/watch؟v=4h75P13a5HI
    30.04.2 ….. 32:24 منٹ – تخسوچت ذات / جنجاتی پروموشنز پر مایاوتی Rajyasabha تقریر

    ، 2012 5 مئی کو شائع

    AMBETH راجن
    قومی خزانچی
    بہوجن سماج پارٹی
    رکن پارلیمنٹ (RS)
    موبائل: +91 98 68 222 333

    https://www.youtube.com/watch؟v=YFGsWegRHsA
    زیرو گھنٹے : راہول ، مودی پر مایاوتی اچھال – حصہ 1 .. 11:26 منٹ .

    https://www.youtube.com/watch؟v=FKylZJoyJcs
    زیرو گھنٹے : راہول ، مودی پر مایاوتی اچھال – حصہ 2 14:49 منٹ .

    یہاں ایک میگا ریلی میں اپنی پارٹی کی انتخابی مہم لات مار ، بدھ کو
    مایاوتی بی ایس پی میں کانگریس ، بی جے پی یا کسی بھی دوسری پارٹی کے ساتھ
    ایک اتحاد قائم نہیں کرے گا اور لوک سبھا کے انتخابات میں اسے اکیلے جانے
    گی .

    https://www.youtube.com/watch؟v=MAdNeksJ1ys
    مایاوتی کی تقریر bsp28 : 27 منٹ

    ، 2013 جون 13 پر شائع

    مایاوتی کی تقریر بسپا

    https://www.youtube.com/watch؟v=95QmGKltODc
    لکھنؤ میں مایاوتی کی پریس کانفرنس ( 18/04/2013 ) 26:36 منٹ

    ، 2013 اپریل 18 پر شائع

    لکھنؤ میں مایاوتی کی پریس کانفرنس ( 18/04/2013 )

    https://www.youtube.com/watch؟v=xVQOzPr2iBc
    مایاوتی – ایک Rally21 کی اناٹومی : 50 منٹ

    بہوجن سماج پارٹی ( بی ایس پی ) کے سربراہ مایاوتی نے جمعرات کو لکھنؤ
    میں ایک پریس کانفرنس میں ننگے اس کی سب سے سنجیدگی وزیراعظم کے عزائم رکھی
    . وہ انتخابی نتائج کا اعلان ہونے کے بعد جیسے ذہن رکھنے والے سیکولر
    جماعتوں کے ساتھ اتحاد اور صف بندی کی بات کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ
    اگرچہ ، وہ “اپ فارمولہ پر” مرکز میں حکومت بنانے کے لئے چاہتے ہیں کہ پر
    زور دیا . تاہم ، وہ یہ ہے کہ فارمولہ سے مراد ہے کے بارے میں صحافیوں کو
    اعلی اور خشک چھوڑ .

    “یہ لوک سبھا انتخابات میں ہمارا ہدف مرکز میں طاقت کے توازن کو بننے کے
    لئے ہے ، ” انہوں نے کی بجائے زیادہ پر ہجوم پریس ملو میں کہا . “ہم اس کو
    حاصل کرتے ہیں ، ہم ذہن کی طرح اور سیکولر اتحادیوں کی مدد سے ہماری اپنی
    حکومت کی تشکیل چاہتے ہیں ، ” انہوں نے کہا .

    پارٹی کے امیدواروں کی فہرست میں کسی بھی اشارہ ہے ، مایاوتی ایک بار
    پھر اس کی ذات / ST- برہمن مسلم سوشل انجینئرنگ کے استعمال کے ساتھ آگے جا
    رہا ہے. یہ اس کے 2007 کے اسمبلی انتخابات میں ایک آرام دہ اور پرسکون
    اکثریت ہے جو اس مجموعہ تھا .

    پارٹی کے برہمن تک میں ٹکٹ کی زیادہ سے زیادہ تعداد میں دیا ہے (21)
    مسلمانوں کی طرف سے followd (19) اور سپریم کورٹ / تخسوچت جنجاتیوں (17) .
    مایاوتی ٹکٹ تقسیم پارٹی کی ترقی کے لئے خاص طور پر ذات یا برادری کی طرف
    سے بنایا شراکت کے تناسب میں تھا .

    دیگر جماعتوں کی طرف سے مختلف طور پر ، مایاوتی ایک بار میں میں 80 لوک
    سبھا نشستوں کے لئے بی ایس پی کے امیدواروں کی پوری فہرست جاری کی . “میں
    قسطوں میں امیدواروں کا اعلان نہیں ہے،” وہ امیدوار کے ٹکڑوں کی فہرستیں
    جاری کی گئی ہے جس میں دوسری پارٹیوں میں ایک ڈی آئی جی لے ، انہوں نے کہا
    کہ . فہرست سرکاری اب اعلان کیا گیا ہے تاہم ، حقیقت یہ ہے کہ بی ایس پی
    تین ماہ پہلے کے بارے میں تقریبا اس کے تمام امیدواروں کو حتمی شکل دینے
    میں frontrunner تھا .

    Sarvajan سماج آئکن بسپا “بی جے پی کی قیادت میں فرقہ پرست طاقتیں ” اور
    ” غیر اداکار اور کرپٹ ” ” ہمارے تمام طاقت کے ساتھ ” پاور کو واپس لوٹنے
    سے جوہری معاہدے پر حکومت کو روکنے کے لئے مصروف عمل کیا گیا تھا . اہم ،
    وہ ان کے پربل مخالف کی سماج وادی پارٹی (ایس پی) شامل ہے جس میں تیسرے
    محاذ کا کوئی ذکر نہیں کیا .

    اصل میں ، انہوں نے کہا کہ ، ملائم اور مودی دونوں ایک خفیہ افہام و
    تفہیم کے ایک حصے کے کے طور پر مشرقی میں نشستوں سے لڑ رہے تھے . “یہ مسلم
    مقابلہ کے مقابلے میں ایک ہندو میں اس انتخاب کو تبدیل کرنے کی ایک سازش ہے
    . وہ اپنے ذاتی مفادات کے لئے ایک خطرناک فرقہ کھیل کھیل رہے ہیں ، ”
    انہوں نے مبینہ طور پر . انہوں نے یہ بھی یہ ایک غریب کی ترقی کے شعبوں میں
    کارکردگی ، اور امن و امان کیا گیا تھا کا کہنا ہے کہ ، اکھلیش یادو کی
    حکومت کو معاف نہیں کیا .

    پہلے ہر انتخاب ، مایاوتی ” Sarvajan hitaaye ، sarvajan sukhaaye ” (
    سب کے لئے ترقی اور خوشحالی ) ، بی ایس پی کی معیاری جملہ کے لئے ووٹ ڈالنے
    کے لئے لوگوں کے لئے ایک اپیل جاری کی گئی تاہم دلچسپ بات یہ ہے ، بی ایس
    پی ، ایک منشور جاری کبھی نہیں .

    پونچھ میں ایک قسم کے طور پر ، وہ بی ایس پی کے خلاف سیاق و سباق سے
    باہر بٹی ہوئی کہانیاں باہر ڈال کے خلاف میڈیا نے خبردار کیا ہے . “میں
    میڈیا ہماری پارٹی کے بارے میں مثبت خبریں ظاہر کرتا ہے لیکن ہمیشہ ہمارے
    بارے میں گمراہ کن کہانیاں اٹھانے میں کبھی نہیں دیکھ رہا ہوں کہ کیا گیا
    ہے ، ” انہوں نے شکایت کی .

    مایا کی کو تبدیل کرنے کے حسابان ( امیدواروں ذات بریک اپ )

    2004 2009 2014

    برہمن 07 20 21

    او بی سی 27 17 15

    مسلمانوں 20 14 19

    ٹھاکروں 06 06 08

    اجا 17 17 17

    نوٹ: 17 نشستیں اتر پردیش میں تخسوچت ذات / جنجاتی کے لئے محفوظ ہیں .
    بی ایس پی کے لوک سبھا انتخابات میں اکیلے ہی جانا : مایاوتی
    مایاوتی وہ پہلے ہی ریاست میں زعفران پارٹی کے ساتھ چلا گیا ہے اور اس
    نظریے میں کوئی تبدیلی نہیں کیا گیا تھا کے طور پر دوبارہ ایسا نہیں کرے گی
    . یہ ٹویٹ
    لکھنؤ | | 20 مارچ ، 2014 5:14 PM بھارت کی پریس ٹرسٹ
    مایاوتی وہ پہلے ہی ریاست میں زعفران پارٹی کے ساتھ چلا گیا ہے اور اس
    نظریے میں کوئی تبدیلی نہیں کیا گیا تھا کے طور پر دوبارہ ایسا نہیں کرے گی
    .

    بہوجن سماج پارٹی اتر پردیش میں تمام 80 لوک سبھا نشستوں میں امیدوار
    کھڑے کرے گی اور ” فرقہ ” بی جے پی اور حکومت کے قیام کے لئے اس کے
    اتحادیوں کے ساتھ نہیں جائیں گے ، اس کے سربراہ مایاوتی نے کہا ہے کہ .

    ” سیاسی مخالفین کے برعکس ” ایک قسط میں ریاست میں تمام امیدواروں کی بی
    ایس پی کی فہرست جاری ، وہ اس پارٹی ” مرکز میں طاقت کے توازن کے طور پر
    ابھر کر سامنے آئے ” کرنے کے لئے مکمل تیاری کے ساتھ انتخابات میں ہے . “ہم
    طاقت کے توازن کے طور پر ابھر کر سامنے آئے کے بعد، ہم حکومت کی تشکیل کے
    لئے صرف سیکولر جماعتوں کی مدد لے گا،” بی ایس پی کے سربراہ نے کہا ہے کہ .

    جس کی حمایت وہ تین بار اتر پردیش میں حکومت قائم کی تھی کے ساتھ بی جے
    پی پر ، مایاوتی وہ پہلے ہی ریاست میں زعفران پارٹی کے ساتھ چلا گیا ہے اور
    اس نظریے میں کوئی تبدیلی نہیں کیا گیا تھا کے طور پر دوبارہ ایسا نہیں
    کرے گی .

    ” ہم میں تین بار بی جے پی کی کوشش کی ہے اور ان کی سوچ اور نظریے میں
    کوئی تبدیلی نہیں کیا گیا ہے . ہم نے ایک اتحاد میں تھے جب ہم نے اپنے
    نظریہ کے مطابق حکومت کی جانب سے بھاگ گیا اور وہ اس میں مداخلت کرنے کی
    کوشش کی ایک بار ہم نے باہر کا انتخاب ، “انہوں نے کہا . “اس کی بجائے بے
    روزگاری ، کرپشن اور غربت جیسے مسائل کی ، آنے والے انتخابات فرقہ اور
    سیکولر ازم کے دو نظریات کے درمیان ایک مقابلہ ہونا ظاہر ، ” انہوں نے سب
    سے زیادہ جماعتوں کے ذہن میں اس حقیقت کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے امیدواروں
    کو میدان میں اتارا ہے نے مزید کہا کہ .

    سابق وزیر اعلی ان کی پارٹی ایک ہی وقت میں ، اقتدار میں آنے سے فرقہ
    وارانہ جماعتوں چیک کرنے کے لیے اپنی تمام طاقت کے ساتھ آنے والے انتخابات
    لڑنے کہ بات پر زور دیا ، کی اجازت دی نہیں کیا جانا چاہئے “تمام محاذوں پر
    ناکام” ہے جس میں جوہری معاہدے پر کانگریس کی قیادت نے کہا ہے کہ واپس
    کرنے کے لئے . وہ حکومت کی تشکیل کے لئے سماج وادی پارٹی کی مدد کرے گا
    پوچھا گیا کہ وہ بی ایس پی ایک سیکولر جماعت کے طور پر اس پر غور نہیں کرتا
    ہے.

    ” اتر پردیش میں ایس پی حکومت کے دور میں اب تک خاص طور پر امن و امان
    اور ترقی کے محاذ پر بہت برا رہا ہے … تو اس وقت حق کی پارٹی ‘ Sarvjan
    Hitai کی پالیسی پر مرکز میں حکومت کی قیادت اس بات کا یقین کرنے کے لئے ہر
    ممکن کوشش ہو گی Sarvjan Sukhai ( فائدہ اور سب کی خوشی کے لئے) ، “انہوں
    نے کہا .

    بالترتیب بی جے پی کے وزیر اعظم کے عہدے کے امیدوار نریندر مودی اور
    وارانسی اور اعظم گڑھ سے ایس پی سربراہ ملائم سنگھ یادو کی امیدواری پر ،
    انہوں نے کہا ، “اس کی پارٹی دونوں Purvanchal سے لڑنے کا فیصلہ ایک اچھی
    طرح منصوبہ بندی کی داخلی تفہیم کا نتیجہ ہے کہ یقین رکھتا ہے .

    وہ اس طرح ایک “سازش” مقابلہ سامپرداییک رنگ دینے کے لئے تھا کہ مبینہ
    طور پر ، اور فرقہ پرست طاقتیں حاصل کرنے کے لئے کی اجازت نہیں کر رہے ہیں
    اس بات کا یقین کرنے کے لئے لوگوں سے اپیل کی .

    میڈیا کے ذریعے ، وہ بھی “وہ ملک کے ماحول کو خراب کر سکتا ہے ” کے طور
    پر دو کی مہم پر قریبی نظر رکھنے کے لئے چیف الیکشن کمشنر کی درخواست کی .

    ایک سوال کے جواب ، مایاوتی ان کی پارٹی اپنے طور پر لڑ رہا ہے کے بعد
    سے کسی بھی بحث کا کوئی سوال نہیں تھا کا کہنا ہے کہ ترنمول کانگریس کی
    ممتا بنرجی یا اننادرمک کی جے للتا کے ساتھ کسی بھی بات چیت ہونے سے انکار
    کیا .

    ” Manuvadi ” میڈیا مہم سے باز اس کے کارکنوں کو مشورہ ، وہ Lalganj
    ملائم سنگھ میدان میں ہے جہاں سے اعظم گڑھ سے ملحق ( محفوظ ) نشست سے
    مقابلہ میں داخل کیا جائے گا کہ ایک حصے میں اطلاعات کے مضبوط رعایت لیا .

    “میں ( اعظم گڑھ ) میں Lalganjseat سے لڑنے کے لئے جا رہا ہوں اس بات سے
    آگاہ نہیں ہوں اور پارٹی رہنماؤں بالترتیب ستیش چندر مشرا یا Naseemuddin
    صدیقی Varansi سے اور اعظم گڑھ نشستیں ، میں میڈیا کے ایک حصے میں شائع اس
    طرح کی خبروں کی تردید ” ، انہوں نے کہا .

    اس موقع پر ، وہ ذہن میں پارٹی معاشرے اور ان کی حمایت کے تمام طبقوں کی
    نمائندگی کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلہ کیا گیا ہے جس میں تمام 80 نشستوں کے
    لئے امیدواروں کے ناموں کی فہرست جاری کی .

    “17 مخصوص نشستوں پر ، تخسوچت ذات کے مختلف ذاتوں کھڑا کیا گیا ہے ، 15
    پیچھے کی طرف ، 19 مسلمان 21 برہمن اور آٹھ کشتری سمیت 29 سورنوں ٹکٹ دیا
    گیا ہے ، جبکہ ” مایاوتی سات خواتین بھی کھڑا کیا گیا ہے نے مزید کہا کہ .

    وہ ان کی پارٹی نے بھی تحریک اور تنظیم کے وجود میں آیا ہے اور ان کی
    فہرست جلد ہی اعلان کیا جائے گا جہاں دیگر ریاستوں میں امیدوار کھڑے کرے گی
    .

    مایاوتی 22 مارچ سے ملک بھر میں اس کی مہم شروع کی اور وہ 3 اپریل کو
    بجنور میں پہلے اجلاس سے خطاب کریں گے جہاں میں اس وقت کے 90 فیصد خرچ کرے .
    دیگر جماعتوں کی طرح سروے کے منشور جاری نہیں کرتا جس میں بی ایس پی ، ،
    کے بجائے مایاوتی کی اپیل کی شکل میں 24 صفحہ کتابچہ جاری کیا .

    میدان میں نمایاں نام یہ ہیں: وجے پرتاپ جایچووال ( بنارس ) ، اکبر حسین
    ( رام پور ) ، شاہ عالم ( اعظم گڑھ ) ، قادر رانا ( مظفر نگر ) ، مکل
    اپادھیائے ( غازی آباد ) ، ستیش Awana ( نوئیڈا ) ، سیما اپادھیائے (
    فتےہپر سیکری ) ، اور نارائن سنگھ ( آگرہ ) .

    انیس احمد پیلی بھیت سے پارٹی کے امیدوار ہے اور بی جے پی کی مینکا
    گاندھی کے خلاف لڑنے گا، رائے بریلی سے Parvesh سنگھ کانگریس صدر سونیا
    گاندھی کے خلاف pitted کیا گیا ہے؛ امیٹھی میں راہل گاندھی اور لکھنؤ میں
    بی جے پی کے قومی صدر راج ناتھ سنگھ کے خلاف نکل دوبے کے خلاف درمیںدر
    پرتاپ سنگھ .

    پون پانڈے بی جے پی کے ورون گاندھی کے خلاف سلطان سے بی ایس پی کے ٹکٹ پر لڑیں گے .
    کماری مایاوتی بھارتی کی سب سے کمزور طبقات کی فلاح و بہبود کو بہتر بنانے
    کے سماجی تبدیلی کا ایک پلیٹ فارم پر مرکوز ہے جس میں بہوجن سماج پارٹی (
    بی ایس پی ) کے سربراہ ، معاشرے کے طور پر اتر پردیش کے وزیر اعلی (یوپی)
    کے طور پر چار شرائط پر کام کرنے والے ایک بھارتی سیاستدان ہے Bahujans یا
    تخسوچت ذات / تخسوچت جنجاتیوں ، دیگر پسماندہ طبقات ، مذہبی اقلیتوں اور
    غریب برہمن ، baniyas اور کشتریوں . اس کے بعد 2002 سے 2003 اور 2007 سے
    2012 تک ، 1997 میں ایک بار پھر 1995 میں مختصر طور پر وزیر اعلی تھا اور .

    شائستہ آغاز سے مایاوتی اضافہ ایک ” جمہوریت کا معجزہ ” کہا گیا ہے .
    1993 میں مایاوتی سماج وادی پارٹی کے ساتھ اتحاد قائم ہے اور اس وقت اتر
    پردیش کی سب سے کم عمر وزیر اعلی بن گئے . وہ ذات وزیر اعلی تخسوچت پہلی
    خاتون تھی . 1997 میں اور 2002 میں وہ وزیر اعلی ، ایک مکمل مدت کے لئے
    دوسری بار تھا .

    مایاوتی کے دور الحمد طرف متوجہ کیا ہے . تخسوچت ذات / تخسوچت جنجاتی /
    او بی سی / اقلیتی / غریب برہمن ، baniyas اور کشتریوں لاکھوں ایک آئکن کے
    طور پر اس کو دیکھنے کے ، اور Behen – جماعت اسلامی ( بہن) کے طور پر اس کا
    حوالہ دیتے ہیں . وہ ان کی پارٹی اور اس کی سالگرہ کی جانب سے اس فنڈ
    ریزنگ کی کوششوں کے لئے تعریف کی ہے بڑے میڈیا کے واقعات اور اس کے حامیوں
    کے لئے ایک علامت بن گئے ہیں . انہوں نے اس کو ان کی فلاح و بہبود ، خوشی
    اور امن کے لئے تمام معاشروں ( سرو سماج ) کے لئے ترقی اور ترقی کے تمام
    دروازے کھول کرنے کے لئے ماسٹر کی کلید ، یعنی ملک کے پورے بجٹ کے حوالے
    کرنے کی کوشش کر رہے ہیں . آخر میں ان کے لئے حتمی مقصد کے طور پر ابدی بلس
    حاصل کرنے کے لئے .
    2007: بی ایس پی کی اکثریت
    اتر پردیش ، سب سے زیادہ آبادی والے ریاست اور اس کے غریب ترین میں سے ایک ،
    کیونکہ ووٹروں کی اس بڑی تعداد کی سیاست میں اہم سمجھا جاتا ہے . بی ایس
    پی ذات اور مذاہب کی ایک قسم سے امیدواروں کی حمایت ، 2007 میں اتر پردیش
    اسمبلی کے انتخابات میں اکثریت حاصل کی .

    مایاوتی 13 مئی 2007 کو چوتھی بار اتر پردیش کے وزیر اعلی کے طور پر حلف
    لیا . وہ سماج کے کمزور طبقوں کو سماجی انصاف فراہم کرنے اور روزگار کے
    مواقع فراہم کرنے کی بجائے بے روزگار کے لئے رقم کی تقسیم پر توجہ مرکوز کی
    ہے کہ ایک ایجنڈے کا اعلان کیا ہے . اس کا نعرہ ” اتم پردیش ” (” بہترین
    صوبہ “) میں ” اتر پردیش ” (” شمالی صوبے “) بنانے کے لئے تھا . مایاوتی آن
    لائن انتخاب امتحان کے نتائج پوسٹنگ سمیت بھرتی کے عمل میں شفافیت کو
    متعارف کرانے کے لئے اصلاحات کا قیام .

    بی ایس پی ریاست میں کسی بھی سیاسی پارٹی کے لئے ووٹ کی سب سے زیادہ
    تناسب ( 27.42 ٪) حاصل کرنے ، 2009 کے انتخابات میں اتر پردیش کی ریاست کی
    طرف سے لوک سبھا میں 20 نشستیں جیتی . پارٹی کے وہ راجیہ سبھا کے لئے
    کاغذات نامزدگی جمع کرائے ، 13 مارچ 2012 . قومی پولنگ فیصد ( 6.17 ٪) کے
    لحاظ سے تیسرے رکھ دیا گیا ، اور وہ 22 مارچ کو بلامقابلہ منتخب قرار دیا
    گیا . اب یہ 67 نشستوں سے تجاوز کرے گا .

    15 2011 نومبر کو ، مایاوتی کی کابینہ بہتر انتظامیہ اور گورننس کے لئے چار مختلف ریاستوں میں اتر پردیش علیحدگی کی منظوری دے دی .

    مایاوتی ( مارچ 2011 کا افتتاح ) Manvyar شری Kanshi رامجی گرین ( ای سی
    او) گارڈن ، راشٹریہ تخسوچت ذات / تخسوچت جنجاتیوں پریرنا Sthal اور گرین
    گارڈن ( افتتاح اکتوبر 2011 ) ، اور ڈاکٹر بھی شامل ہیں ، اس خواب کے
    منصوبوں کے کئی تکمیل کے ذریعے دیکھا ہے Bhimrao امبیڈکر Samajik
    Parivartan پرتیک Sthal ( کھول نومبر 2012) .
    2014 کے آئندہ انتخابات ، ان انتخابات میں کے طور پر ، ہماری جمہوریت کی بقا کے لئے بہت اہم ہیں
    جمہوریت چھپنے الیکشن کمیشن ووٹروں کی طرف سے ووٹروں اور ہٹا نام کے طور پر
    تمام اہل شہریوں کو شامل کرنے کے لئے تمام کوششوں کو شامل کرنے کی فہرست
    میں ہونا ضروری ہے . اور بھی ثبوت چھیڑنا نہیں ہیں کہ الیکٹرانک ووٹنگ
    مشینوں کھلا ماخذ کوڈ عوامی بنانے کے لئے .

    بدھ کے روز ممبئی میں فنڈ مینیجرز اور اسٹاک بروکرز کے ایک گروپ سے
    ملاقات کے بعد ، انیل سنگھوی ، سرمایہ کاری بینکر اور 50 فنڈ مینیجرز اور
    بروکرز کے قریب کی طرف سے شرکت امبجا سیمنٹ ، کے سابق مینیجنگ ڈائریکٹر ،
    Nairman پوائنٹ میں بجاج بھون میں منعقد کیا گیا تھا . دلال Ramdeo اگروال
    پہلے ہی ووٹروں کو اس کے حق میں ہو جائے گا کے لئے ، وزیر اعظم کے لئے کسی
    اور مایاوتی کے درمیان کسی بھی انتخاب ہو جائے گا کہ اس کا احساس ہو گیا .

    کئی پارٹیوں کی طرف سے وزیراعظم کے امیدوار کے اعلان کے بارے میں ایک
    بہت بڑا شور ہے . یہ بہت پارلیمنٹ کے پہلے اراکین کے نتیجے میں وزیر اعظم
    کا انتخاب جو منتخب ہوتے ہیں جہاں جمہوریت ، ہمارا نظام کے خلاف ہے . ان
    جماعتوں کے مسائل کے مختلف سیٹ ہے اور ہمارے جیسے تنوع کے ساتھ ایک ایسے
    ملک کے لئے مناسب نہیں ہے جو انتخابات کے صدارتی نظام ، کی سمت میں معاملات
    لینے کے لئے چاہتا ہے .

    جمہوریت چھپنے میڈیا ، سوشل میڈیا اور سماجی کلاس کے سیکشن کی ایک بڑی
    سیکشن؛ خاص طور پر مڈل کلاس بی ایس پی نے ہمارے مسائل کا واحد حل ہے کے طور
    پر اگر ایک ماحول پیدا کرنے شروع کر دیا ہے .

    http://news.bspindia.org/hindi/

    بی جے پی میں صرف 4-5 نشستیں حاصل کریں گے. مودی خود VARANASHI میں ختم ہو جائے گی .

    بی جے پی کے میڈیا میں اور ادا کی ریلی کے علاوہ ، میں کہیں نہیں ہے .

    http://timesofindia.indiatimes.com/india/Some-ministers-opposed-to-PMs-visit-to-Lanka-for-CHOGM/articleshow/25072461.cms?messageid=24693106&intenttarget=no&r=1395812071228
    بھارت کے ٹائمز

    awakenmedia ( بنگلور )
    جمہوریت چھپنے الیکشن کمیشن ووٹروں کی طرف سے ووٹروں اور ہٹا نام کے طور پر
    تمام اہل شہریوں کو شامل کرنے کے لئے تمام کوششوں کو شامل کرنے کی فہرست
    میں ہونا ضروری ہے . اور بھی ثبوت چھیڑنا نہیں ہیں کہ الیکٹرانک ووٹنگ
    مشینوں کھلا ماخذ کوڈ عوامی بنانے کے لئے . بدھ کے روز ممبئی میں فنڈ
    مینیجرز اور اسٹاک بروکرز کے ایک گروپ سے ملاقات کے بعد ، انیل سنگھوی ،
    سرمایہ کاری بینکر اور 50 فنڈ مینیجرز اور بروکرز کے قریب کی طرف سے شرکت
    امبجا سیمنٹ ، کے سابق مینیجنگ ڈائریکٹر ، Nairman پوائنٹ میں بجاج بھون
    میں منعقد کیا گیا تھا . دلال Ramdeo اگروال پہلے ہی ووٹروں کو اس کے حق
    میں ہو جائے گا کے لئے ، وزیر اعظم کے لئے کسی اور مایاوتی کے درمیان کسی
    بھی انتخاب ہو جائے گا کہ اس کا احساس ہو گیا . کئی پارٹیوں کی طرف سے
    وزیراعظم کے امیدوار کے اعلان کے بارے میں ایک بہت بڑا شور ہے . یہ بہت
    پارلیمنٹ کے پہلے اراکین کے نتیجے میں وزیر اعظم کا انتخاب جو منتخب ہوتے
    ہیں جہاں جمہوریت ، ہمارا نظام کے خلاف ہے . ان جماعتوں کے مسائل کے مختلف
    سیٹ ہے اور ہمارے جیسے تنوع کے ساتھ ایک ایسے ملک کے لئے مناسب نہیں ہے جو
    انتخابات کے صدارتی نظام ، کی سمت میں معاملات لینے کے لئے چاہتا ہے .
    جمہوریت چھپنے میڈیا ، سوشل میڈیا اور سماجی کلاس کے سیکشن کی ایک بڑی
    سیکشن؛ خاص طور پر مڈل کلاس بی ایس پی نے ہمارے مسائل کا واحد حل ہے کے طور
    پر اگر ایک ماحول پیدا کرنے شروع کر دیا ہے . بی جے پی میں صرف 4-5 نشستیں
    حاصل کریں گے. مودی خود VARANASHI میں ختم ہو جائے گی . بی جے پی کے میڈیا
    میں اور ادا کی ریلی کے علاوہ ، میں کہیں نہیں ہے . بی ایس پی کے لئے ووٹ
    ڈالنے کے لئے اور BAHEN مایاوتی جماعت اسلامی PRABUDDHA BHARATH کے اگلے
    وزیر اعظم ماہا مایاوتی جماعت اسلامی کے لیے شاہ کلید کے حوالے کرنے سے آپ
    کا دانشمندانہ فیصلہ کے لئے شکریہ

    آپ کا دانشمندانہ فیصلہ
    کرنے کے لئے

    14anim.gif

    اور
    BAHEN مایاوتی جماعت اسلامی کے اگلے وزیر اعلی مایاوتی جماعت اسلامی کے لیے شاہ کلید کے حوالے کرنے
    کے
    PRABUDDHA BHARATH


FOR YOUR WISE DECISION
TO

 

14anim.gif

AND
 TO HAND OVER THE MASTER KEY TO  BAHEN MAYAWATI JI AS NEXT PRIME MINISTER MAHA MAYAWATI JI
OF
PRABUDDHA BHARATH





comments (0)